پاکستان

کوئلے کی کان میں کام کرنے والے 11 مزدور اغوا کے بعد قتل

نامعلوم افراد کوئلےکی کان میں کام کرنےوالےمزدوروں کواغوا کرکےپہاڑوں پر لےگئے

بلوچستان کےضلع بولان کی تحصیل مچھ  کےعلاقےگشتری میں ہفتےاوراتوارکی درمیانی شب نامعلوم افراد کوئلےکی کان میں کام کرنے والےمزدوروں کواغوا کرکےپہلےپہاڑوں پرلےگئےاورپھران پرفائرنگ کردی۔ واقعےکےبعد مسلح افراد نامعلوم سمت فرارہوگئے۔ ذرائع کا کہنا ہےکہ واقعےکی اطلاع ملتےہی پولیس،انتظامیہ،اورسیکیورٹی فورسزکی بھاری نفری موقع پرپہنچ گئی۔ واقعےمیں کم از کم 11 کان کن جاں بحق ہوگئےہیں،لاشوں کومچھ کےسرکاری اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

ڈپٹی کمشنربولان مراد کاسی کا کہنا ہےکہ واقعےمیں 4 افراد زخمی بھی ہیں جن کا علاج جاری ہے،کان کنوں کی میتیں مچھ سےلانےکےلئے ایمبولینسیں کوئٹہ سےروانہ ہوگئی ہیں۔ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نےمچھ میں دہشت گردی کی مذمت اورجانی نقصان پراظہارافسوس کرتے ہوئےکہا کہ ملزمان کوجلد کیفرکردارتک پہنچائیں گے،دہشت گردوں کےخلاف گھیرا مزید تنگ کیا جائےگا۔ واضح رہےکہ گزشتہ چند ماہ کے دوران بلوچستان میں تشدد اوربد امنی کی نئی لہراٹھی ہے۔ چند روزقبل آواران میں 7 سیکیورٹی اہلکارشہید کردیئےگئےتھے۔

متعلقہ خبریں