پاکستانفیچرڈ پوسٹ

جناب وزیراعظم آپ چاہتے ہیں کہ کرسی سلامت رہے؟ لیکن آپ کے پاس وقت کم اور؟ خاتون صحافی عاصمہ شیرازی نے خبردار کر دیا

غیر معمولی حالات اور اوپر سے غیر معمولی وائرس کا سامنا، ان حالات میں محض معمولی اقدامات کے نتائج سنگین ہو سکتے ہیں

سینئر خاتون صحافی عاصمہ شیرازی نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ جناب وزیراعظم آپ چاہتے ہیں کہ کرسی سلامت رہے لیکن آپ کے پاس وقت کم اور مقابلہ سخت ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی عاصمہ شیرازی نے اپنے کالم میں لکھا ہے کہ جناب کی کرسی سلامت رہے۔۔۔ وقت کم اور مقابلہ سخت ہے۔ غیر معمولی حالات اور اوپر سے غیر معمولی وائرس کا سامنا، ان حالات میں محض معمولی اقدامات کے نتائج سنگین ہو سکتے ہیں۔مانا کہ یہ وقت تنقید کا نہیں مگر جب بات حلق تک آ پہنچے اور جاں بلب ہو تو جان بچانے کے لیے ہاتھ پاں چلانا پڑتے ہیں۔ اس وقت حالات کا تقاضا فقط اتنا ہی ہے کہ عملا چاہے کچھ ہو یا نہ ہو مگر کم از کم معاملات پر غیر سنجیدگی کا شائبہ بھی نہ ہو۔

کورونا کی پاکستان آمد کے بعد سے اب تک وزیراعظم کا تیسرا ہفتہ وار خطاب قوم سن چکی ہے۔ خطاب کے اختتام پر عوام تا حال فیصلہ کرنے سے قاصر ہیں کہ کس حد تک سنجیدگی کا مظاہرہ کیا جائے اور کس حد تک نہیں؟ وزیراعظم کے بیانات الگ اور اقدامات الگ عوام کو کنفیوژن میں مبتلا کر رہے ہیں۔ وزیراعظم نے دوسرے خطاب میں فرمایا تھا کہ لاک ڈان نہیں کروں گا۔ اگلے چند ہی گھنٹوں میں پنجاب حکومت نے لاک ڈان کا نفاذ کر دیا اور پھر اگلی ہی شام ڈی جی آئی ایس پی آر نے پریس کانفرنس میں مکمل لاک ڈان کی تفصیلات بھی بتا دیں۔ نجانے کون کہاں فیصلے کر رہا ہے۔۔۔ مگر خیر ہو کرسی کی۔۔۔ کرسی سلامت رہے۔

متعلقہ خبریں