پاکستان

"انوکھا شوق”۔۔۔۔ امریکی شہری نے 30 لاکھ روپے دے کر مار خور کا شکار کر لیا

چترال میں انتظامیہ کی اجازت سے امریکی شہری نے 88 ہزار امریکی ڈالر کی فیس ادا کرکے قومی جانور مار خور کا شکار کیا۔

محکمہ تحفظ جنگلات کے مطابق ایک کروڑ 30 لاکھ روپے فیس کے عوض امریکی شہری کو پاکستان کے قومی جانور مارخور کے شکار کی اجازت دی گئی تھی۔چترال میں محکمہ جنگلات کے ضلعی افسر الطاف علی شاہ نے بتایا کہ امریکی شہری ایڈورڈ جوزف ہڈسن نے 40 انچ کے سینگوں والے 10 سالہ مارخور کا شکار 88 ہزار ڈالرز کی فیس ادا کرکے کیا۔پاکستان میں بھاری فیس کے عوض مارخور کا شکار کو ’’ٹرافی ہنٹنگ اسکیم‘‘ کا نام دیا جاتا ہے جس کے لیے ہر سال 12 لائسنسز جاری کیے جاتے ہیں۔

الطاف علی شاہ کا کہنا تھا کہ اس شکار کی منفرد بات یہ تھی کہ اسے شکاری نے بندوق کے بجائے تیر کمان کے ذریعے کیا تھا۔ شکاری اس کے سينگ اپنے پاس عمر بھر محفوظ رکھتے ہيں کيوں کہ يہ بڑے اعزاز کی بات ہوتی ہے۔

متعلقہ خبریں