پاکستان

کوئٹہ :وزیرِاعظم کی زیرِصدارت اہم اجلاس،کیا فیصلے ہوئے؟اندرکی خبر

وزیرِاعظم سےگورنربلوچستان امان اللّٰہ یاسین زئی اوروزیرِاعلیٰ جام کمال خان نےملاقات کی

کوئٹہ میں وزیرِاعظم عمران خان کی زیرِصدارت امن وامان سےمتعلق اجلاس ہوا ہےجس میں گورنربلوچستان امان اللّٰہ یاسین زئی،وزیرِاعلیٰ جام کمال خان،وفاقی وزیرِداخلہ شیخ رشید احمد شریک ہوئے۔ وفاقی وزیرعلی زیدی،وزیرِاعظم کےمعاونِ خصوصی زلفی بخاری،ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری،صوبائی وزیرِداخلہ ضیاء لانگواوردیگرحکام نےبھی اجلاس میں شرکت کی۔ اس سےقبل سانحۂ مچھ کےمتاثرہ خاندانوں سےتعزیت کےلیےوزیرِاعظم عمران خان کوئٹہ پہنچےہیں۔ وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ میں پولیس دستےنےوزیراعظم عمران خان کو سلامی پیش کی،جبکہ وزیرِاعظم سےگورنربلوچستان امان اللّٰہ یاسین زئی اوروزیرِاعلیٰ جام کمال خان نےملاقات کی۔ وزیرِاعظم عمران خان کی کوئٹہ آمد سانحۂ مچھ کےلواحقین کا اوّلین مطالبہ تھا،جس کےلیےانہوں نے 6 روزمیتوں کےہمراہ مغربی بائی پاس پردھرنا دیا ہے۔

اس سےقبل وزیرِاعظم عمران خان کوئٹہ کےلیےنورخان ایئربیس سےروانہ ہوئےتوان کےہمراہ وفاقی وزیرِداخلہ شیخ رشید احمد اوردیگر وزراء بھی تھے۔ وزیرِاعظم عمران خان ایک روزۂ دورۂ کوئٹہ کےدوران سانحۂ مچھ میں جاں بحق ہونےوالےکان کنوں کےلواحقین سے تعزیت کریں گے، وہ ہزارہ برادری کےمعززین اورعلمائےکرام سےبھی ملاقات کریں گے۔ کوئٹہ میں وزیرِاعظم عمران خان کی آمد کےموقع پرسیکیورٹی کےسخت انتظامات کیےگئےہیں، ایئر پورٹ روڈ سےملحقہ علاقوں میں دکانیں اورکاروباری مراکزبند کرا دیئےگئےہیں۔ ایئر پورٹ روڈ پرواقع مختلف پیٹرول پمپ بھی بند کرا دیئےگئےہیں،ایئرپورٹ روڈ کےدونوں اطراف پولیس اورقانون نافذ کرنےوالے اداروں کے اہلکارتعینات کیئےگئےہیں۔

متعلقہ خبریں