پاکستانفیچرڈ پوسٹ

کورونا ویکسین کی خریداری، عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے کا منصوبہ بے نقاب‘ عالمی ادارہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نے سوالات اٹھا کر پوری دنیا کو حیران کر کے رکھ دیا

ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نے پاکستانی عوام کے لیے250 ملین ڈالر (25کروڑ ڈالر)سے خریدی جانے والی کورونا ویکسین پر تحفظات کا اظہار کردیا

کورونا ویکسین کی خریداری، عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے کا منصوبہ بے نقاب‘ عالمی ادارہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نے سوالات اٹھا کر پوری دنیا کو حیران کر کے رکھ دیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیرا عظم کو لکھے جانے والے خط میں ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کے چیئرمین سہیل مظفر نے کہا ہے کہ کسی بھی خریداری میں کرپشن روکنے کیے پیپرا کے رول نمبر 47 پر عمل درآمد ضروری ہے۔ جو بھی ٹینڈر کئے جائے اس ٹینڈر کے تمام کاغذات پیپرا کی ویب پر مہیا کئے جائیں۔ سہیل مظفر نے کہا کہ پوری دنیا میں فی ڈوز ویکسین 4 ڈالر سے37 ڈالر تک ہے جبکہ حکومت پاکستان کی جانب سے خریدی جانے والی کورونا ویکسین کے ریٹس یا ٹینڈر کی تفصیلات تاحال سامنے نہیں آئیں۔ واضح رہے کہ پیپرا رولز کے مطابق گورنمنٹ کا کوئی بھی ادارہ جب بھی کوئی خریداری کرے گا وہ خریداری کے تمام معاہدے اور خریداری کی قیمت اپنی ویب سائیٹ پر دینے کا پابند ہے۔

متعلقہ خبریں