پاکستان

خدا کا واسطہ ہے دھرنا دینا ہے تو عوام کو کیوں پریشان کرتے ہو تمہیں دھرنا کہاں دینا چاہیے؟ صحافی مظہر عباس نے مطالبہ کردیا

اگر رکاوٹ ڈالنی ہی ہوتی ہے تو اقتدار کے ایوانوں کے باہر دھرنا دیں کیونکہ مسئلہ وہیں سے حل ہوتا ہے‘ روڈ بلاک کرنے سے کچھ نہیں ملتا

سینئر صحافی و کالم نگار مظہر عباس نے مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ خدا کا واسطہ ہے دھرنا دینا ہے تو عوام کو کیوں پریشان کرتے ہوئے ایسی جگہ دھرنا دو جہاں کسی کو کوئی پریشانی نہ ہو۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی مظہر عباس کا کہنا تھا کہ خدارا احتجاج کے طریقے بدلیں۔ کوئٹہ میں تو ہزارہ کی خواتین اور مرد جنازے لئے خاموش بیٹھے رہے مگر ملک بھر میں جو دھرنے ہوئے، ان کے باعث پریشان صرف عوام ہوئے۔ اگر رکاوٹ ڈالنی ہی ہوتی ہے تو اقتدار کے ایوانوں کے باہر دھرنا دیں کیونکہ مسئلہ وہیں سے حل ہوتا ہے۔ یہ فیصلہ سیاسی جماعتوں کو بھی کرنا چاہئے اور مذہبی جماعتوں کو بھی۔ وزیر اعظم ہاؤس، گورنر ہاؤس اور وزیر اعلی ہاؤس کے راستے کھلے ہوں اور عام سڑکیں بند ہوں تو بات بنتی نہیں ہے۔ اس سے صرف عوام ہی پریشان ہوتے ہیں۔ معاہدہ بھی ہوگیا، انا بھی پوری ہوگئی اور پیاروں کی تدفین بھی۔ سب اپنے اپنے گھر کو لوٹ گئے۔ ٹاک شوز میں ایک بار پھر گولہ باری شروع ہوگئی مگر ان بچیوں کا کیا ہوگا جن کے گھرمیں اب کوئی مرد نہیں بچا۔ جنازے اٹھانے کے لئے چار آدمی تو مل ہی جاتے ہیں مگر سہارا دینے کے لئے۔ یہ کیسی ریاست بنادی ہے ہم نے جہاں لاشیں سڑک پر رکھ کر انصاف طلب کیا جاتا ہو مگر نہ انصاف ہوتا نظر آتا ہے نہ ہی انصاف ہوتا ہے اور پھر ایک اور سانحہ ہوجاتا ہے۔

متعلقہ خبریں