پاکستانفیچرڈ پوسٹ

فوج کا سیاسی معاملات سے علیحدگی کا اعلان،حکومت کو آگاہ کردیا گیا کہ وہ اپنے معاملات خود مل بیٹھ کر حل کریں،ورنہ……سیاستدانوں کا خون جما نے والی خبر

میری رائے میں فوج نے ہاتھ کھڑے کر دیئے ہیں کہ ہمارا سیاست سے کوئی تعلق نہیں، آپ جانیں اور سیاستدان جانیں

فوج کا سیاسی معاملات سے علیحدگی کا اعلان کے بعد حکومت کو آگاہ کر دیا گیا ہے کہ وہ اپنے معاملات خود مل بیٹھ کر حل کریں ورنہ مجبوراً اسٹیبلشمنٹ کو اپنا کردار ادا کرنا پڑے گا۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی امتیاز عالم نے دعوی کیاہے کہ آئی ایس پی آر کی بریفنگ ایسے وقت میں آئی ہے جب عمران خان کی آرمی چیف اور آئی ایس آئی چیف سے دو ملاقاتیں ہوئیں اس کے بعد میجر جنربابرافتخار نے پریس کانفرنس کی، میری رائے میں فوج نے ہاتھ کھڑے کر دیئے ہیں کہ ہمارا سیاست سے کوئی تعلق نہیں، آپ جانیں اور سیاستدان جانیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابرافتخارکی پریس کانفرنس پر تجزیہ کرتے ہوئے سینئر صحافی اور کالم نگار امتیاز عالم نے یوٹیوب چینل پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن نے جو مہم چلائی تھی اس سے کافی اثر پھیلاہے، کچھ لوگ بتاتے ہیں کہ فوج میں غصہ پایا جاتاہے کہ جب ملک میں براہ راست مارشل نہیں ہے اور ایک منتخب حکومت ہے تو فوج کو آپ کیوں بیچ میں گھسیٹ رہے ہیں، ایک صفحے والی بات میں فرق پڑاہے، فوج کیوں پارٹی بنے سیاستدانوں کی لڑائی میں؟ اگر عمران خان احتساب کے نام پر اپنے مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنا رہے ہیں تو فوج کا یہ ایجنڈا نہیں ہو سکتا، ان کا کسی سے کوئی ذاتی مسئلہ نہیں ہے، بار بار جس طریقے سے مولانا فضل الرحمان اور نوازشریف نے آرمی چیف اور آئی ایس آئی چیف پر تنقید کی کہ یہ سلیکٹر ہیں، فوج نے ان بیانات کا بہت اچھا جواب دیاہے اور بردباری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ٹھنڈے دل کا مظاہرہ کیاہے۔

متعلقہ خبریں