پاکستان

کرپشن کیسز پر براڈ شیٹ کو تحقیقات کا حکم پرویز مشرف نے کیوں دیا؟ کن کن سابق فوجی افسران کو فائدہ پہنچایا گیا، سنسنی خیز رپورٹ آگئی

جنرل مشرف نے انہیں بدعنوانی کے اسکینڈلز،جن میں چینی، آئل مافیا اورحتی کہ کئی بلین ڈالر حجم رکھنے والاا سٹاک ایکس چینج کاسقم بھی شامل تھا

کرپشن کیسز پر براڈ شیٹ کو تحقیقات کا حکم پرویز مشرف نے کیوں دیا؟ کن کن سابق فوجی افسران کو فائدہ پہنچایا گیا، سنسنی خیز رپورٹ منظر عام پر آگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق چیئرمین نیب، لیفٹیننٹ جنرل (ر)شاہد عزیز نے تسلیم کیا تھا کہ جنرل مشرف نے انہیں بدعنوانی کے اسکینڈلز،جن میں چینی، آئل مافیا اورحتی کہ کئی بلین ڈالر حجم رکھنے والاا سٹاک ایکس چینج کاسقم بھی شامل تھا، کوبند کرنے کی ہدایت کی تھی۔ سابق چیئرمین کا اعتراف ظاہرکرتا تھا کہ کس طرح یکے بعد دیگر ے مختلف حکمرانوں نے نیب قوانین کی دھجیاں اڑاتے ہوئے اس ادارے کو اپنے مفاد کے لیے استعمال کیا ہے۔ افسوس کی بات یہ ہے کہ گزشتہ دو عشروں کے دوران کئی ملزموں نے سختی یا میڈیا میں بدعنوانی کے الزامات کی بھرمار کی وجہ سے یاتو خود کشی کرلی یا وہ ادارے کی تحویل میں ہی فوت ہوگئے۔ اگرچہ نیب کے طریقہ کار اورفعالیت کو بہت سے حلقے بے رحم قرار دیتے ہیں لیکن اس کا سلسلہ بلاروک ٹوک جاری ہے۔ اس کی اپنی جانچ کا کوئی نظام موجود نہیں۔ ستم ظریفی یہ ہے کہ جو ادارہ دوسروں کے احتساب کے لیے قائم کیا گیا تھا، اس کا کوئی احتساب نہیں کرسکتا۔

متعلقہ خبریں