پاکستان

فارن فنڈنگ معاملہ، پی ٹی آئی نے الیکشن کمیشن کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے، بڑی ہلچل

اگر کوئی ایجنٹ ہدایت کے برعکس رقم جمع کرے اور تفصیل بھی پارٹی کو نہ دے تو اس کی ذمے دار پی ٹی آئی نہیں: تحریری درخواست

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے فارن فنڈنگ معاملہ پر الیکشن کمیشن کے آگے گھٹنے ٹیکتے سب کچھ مان لیا ہے جس کے بعد ملک میں بڑی ہلچل مچ گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی)نے الیکشن کمیشن کے رو بہ رو مان لیا کہ امریکا سے فارن فنڈنگ ہوئی لیکن کہا کہ امریکا میں فنڈز اکٹھا کرنے والے ایجنٹس کو عمران خان کی واضح ہدایت تھی کہ صرف ان ذرائع سے فنڈنگ حاصل کریں جو ممنوعہ نہ ہوں۔ تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن میں جمع کرائے گئے تحریری جواب میں کہا ہے کہ اگر کوئی ایجنٹ ہدایت کے برعکس رقم جمع کرے اور تفصیل بھی پارٹی کو نہ دے تو اس کی ذمے دار پی ٹی آئی نہیں۔ پی ٹی آئی کے تحریری جواب کے مطابق ایجنٹس نے بیان حلفی دیا تھا کہ انھوں نے فنڈز اکٹھا کرنے کی پارٹی پالیسی پرعمل کیا۔ کیس کے درخواست گزار اکبر ایس بابر نے اس پر کہا کہ پہلے پی ٹی آئی کا ماننا تھا کہ اس نے امریکا سے غیر قانونی فنڈنگ لی ہی نہیں، اب وہ غیر قانونی فنڈنگ کا الزام ایجنٹس پر ڈال رہی ہے۔ الیکشن کمیشن اسکروٹنی کمیٹی نے دستاویزات کے صحیح یا غلط ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

متعلقہ خبریں