پاکستانفیچرڈ پوسٹ

اپنے ہی گراتے ہیں نشیمن پر بجلیاں …… وزیراعظم عمران خان کو سب سے زیادہ خطرہ کس سے؟جہانگیر ترین یا عثمان بزدار؟ حامد میر نے سچائی بے نقاب کر دی

پنجاب اسمبلی میں اراکین اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کو جا جا کر وزیراعلی پنجاب کی شکایتیں لگا رہے ہیں۔ ایسے حکومت نہیں چلتی

سینئر صحافی و تجزیہ کار حامد میر نے سچائی بے نقاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کو سب سے زیادہ خطرہ جہانگیر ترین سے نہیں بلکہ سردار عثمان بزدار سے ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی و تجزیہ کار حامد میر نے کہا کہ میں ذاتی طور پر یہ سمجھتا ہوں کہ عمران خان کی حکومت کو اپنی مدت پوری کرنی چاہیے۔لیکن گذشتہ دو اسمبلیوں یعنی گذشتہ دس سالوں کی پاکستان کی جو پارلیمانی سیاسی تاریخ ہے وہ ہمیں یہ بتاتی ہے کہ 2008 میں جب پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت آئی تو اسمبلی نے اور حکومت نے اپنی مدت پوری کی لیکن وزیراعظم دو تھے، پہلے یوسف رضا گیلانی تھے پھر راجہ پرویز اشرف۔ اس کے بعد مسلم لیگ ن کی حکومت آئی تو ان کی حکومت نے مدت تو پوری کی لیکن وزیراعظم دو تھے، پہلے نواز شریف تھے اور پھر شاہد خاقان عباسی۔

حامد میر نے کہا کہ اس لیے میری ذاتی رائے یہ ہے کہ اگر چہرہ تبدیل ہونا ہے تو ہو جائے لیکن پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو اپنی مدت پوری کرنی چاہیے‘ یہ ہیٹرک ہونی چاہیے، یہ میری ذاتی خواہش ہے لیکن پی ٹی آئی کو خود بھی کوئی ایسا کام کرنا چاہیے کہ ان کی حکومت مدت پوری کرے۔ اب وہ کیا کر رہے ہیں یہ سب کے سامنے ہیں۔ پاکستان کا ایک بڑا صوبہ، پنجاب کافی عرصہ کے بعد مسلم لیگ ن کے علاوہ کسی اور کو ملا ہے، جس طرح اس صوبے کو چلایا جا رہا ہے وہ سب کے سامنے ہے۔

پی ٹی آئی کے پنجاب اسمبلی میں جو اراکین ہیں وہ اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کو جا جا کر وزیراعلی پنجاب کی شکایتیں لگا رہے ہیں۔ ایسے حکومت نہیں چلتی۔ اگر عمران خان مرکز میں اپنی حکومت کو گھسیٹتے رہیں اور پنجاب ان کے ساتھ نہ چلے تو پانچ سال پورے کرنے کے بعد بھی یہ لوگوں کو کیا دکھائیں گے؟ حامد میر نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں کہ اس وقت عمران خان کا سب سے بڑا مسئلہ عثمان بزدار ہیں، عثمان بزدار عمران خان کا مسئلہ نمبر ایک ہیں۔ اب اگر وہ یہ بات نہیں مان رہے اور ضد پر اڑے ہوئے ہیں تو میرے خیال میں وہ اپنے آپ سے دشمنی کر رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button