پاکستانفیچرڈ پوسٹ

وفاقی وزیر شیریں مزاری نے وزیراعظم عمران خان کو کب اور کس مقصد کے لئے بلیک میل کیاتھا؟ سینئر صحافی نے راز فاش کر دیا

فوزیہ قصوری کو پیشہ خرچ کر کے ہرایا گیا، شیریں مزاری نے عمران خان کو ٹکٹ کے معاملے پر بلیک میل کیا اور کہا کہ نمبر ون میرا ٹکٹ ہو گا

وفاقی وزیر شیریں مزاری نے وزیراعظم عمران خان کو کب اور کس مقصد کے لئے بلیک میل کیاتھا؟ اس حوالے سے سینئر صحافی نے راز فاش کرکے تھرتھرلی مچا دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق صحافی و تجزیہ کار ہارون الرشید نے کہا کہ پرویز خٹک 2012 میں پی ٹی آئی میں شامل ہوئے اور پھر انہیں وزیراعلیٰ بنا دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پرویز خٹک نے وزیراعلیٰ بنانے کی دھمکی بھی دی تھی لیکن پھر انہوں نے کہا کہ مجھ پر عمران خان کے بہت سے احسانات ہیں۔ اگر وہ کہتے ہیں کہ میں نے کرپشن نہیں کی تو وہ صحیح کہہ رہے ہیں کہ انہوں نے آج تک کوئی کرپشن نہیں کی۔ ان کی جوڑ توڑ کی بھی صلاحیت ہے۔ 18 سال سے فوزیہ قصوری، جو ہی ٹی آئی کی خاتون ونگ کا حصہ تھیں انہیں پیسہ خرچ کر کے ہرایا گیا تھا۔ بعد ازاں شیریں مزاری نے عمران خان کو ٹکٹ کے معاملے پر بلیک میل کیا اور کہا کہ نمبر ون میرا ٹکٹ ہو گا۔

ہارون الرشید نے کہا کہ میں آپ کو یہ بات لکھ کر دیتا ہوں، اندازے کی حد تک یقین سے کہتا ہوں کہ پرویز خٹک پہلا موقع ملتے ہی وزیراعظم عمران خان کو دھوکہ دیں گے۔ ان میں سے کوئی ایک بھی نہیں ہے جو یہ دعوی کر سکے کہ وہ عمران خان کے ساتھ پہلے 15 سالوں میں پوری طرح متحرک رہا ہے۔ مجھے تو الیکشن نہیں لڑنا تھا، کتنے صحافی ہیں جو کہتے ہیں کہ ہم نے عمران خان کا ساتھ دیا، یہ کوئی کلپ نکال کے دکھا دیں، میرے علاوہ کوئی بھی ایسا نہیں تھا۔ لیکن مجھے کسی قسم کا انعام نہیں چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے بھی سینیٹر بنانے کی پیشکش کی گئی تھی لیکن میں نے قبول نہیں کی۔ خوشامد سے بد تر کوئی چیز نہیں ہو سکتی۔ اسی لیے میں نے یہ پیشکش قبول نہیں کی کیونکہ مجھے آزادی پسند ہے۔ میں اسی نوکری میں خوش ہوں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button