پاکستان

مجرمان کی حوالگی کا معاملہ، پاکستان اور برطانیہ میں بڑا بریک تھرو کون کون سے مجرمان ایک دوسرے کو دیئے جائیں گے؟ فائنل ہوگیا

پاکستان اور برطانیہ کے مابین مجرموں کی حوالگی کے معاہدے کو جلد مکمل کرنے پر اتفاق، ایسے اقدامات کرنے چاہئیں کہ جرم کرنے والے کو کہیں پناہ نہ ملے

مجرمان کی حوالگی کا معاملہ، پاکستان اور برطانیہ میں بڑا بریک تھرو کون کون سے مجرمان ایک دوسرے کو دیئے جائیں گے؟ اس حوالے سے سب فائنل ہوگیاہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید سے پاکستان میں تعینات برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر نے ملاقات کی جس میں پاکستان اور برطانیہ کے دو طرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی کیامور پر بات چیت ہوئی۔ ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان مجرموں کی حوالگی سے متعلق معاہدے پر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا اور اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ معاہدے کو جلد از جلد مکمل کیا جائے۔وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا کہ پاکستان کے برطانیہ کے ساتھ دیرینہ اور مضبوط تعلقات ہیں، پاکستان سے متعلق برطانیہ کی مثبت سکیورٹی ایڈوائس کی وجہ سے ملک کو فائدہ ہوا اور پاکستان کا بیرونی دنیا میں تشخص بہتر ہوا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور برطانیہ میں رابطے مزید تیز کرنے کی ضرورت ہے، ایسے اقدامات کرنے چاہئیں کہ جرم کرنے والے کو کہیں پناہ نہ ملے۔ ملاقات میں برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر کورونا کو قابو کرنے کے حوالے سے پاکستان کے اقدامات کو تسلی بخش قرار دیا اور کہا کہ پاکستان کی داخلی سیکیورٹی بہت تسلی بخش ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button