پاکستانفیچرڈ پوسٹ

وزیراعظم عمران خان کے پاس ایسے ثبوت ہیں کہ پوری دینا میں تہلکہ مچ جائے گا؟ سینئر صحافی حامد میر کے انکشافات نے ملکی سیات میں نیا طوفان کھڑا کر دیا

زیراعظم عمران خان کے پاس ملک میں ہنگامہ برپا کر دینے والی دستایزات موجود ہیں لیکن کچھ مجبوریوں کی وجہ سے وہ خاموش ہیں

وزیراعظم عمران خان کے پاس ایسے ثبوت ہیں کہ پوری دینا میں تہلکہ مچ جائے گا؟ سینئر صحافی حامد میر کے انکشافات نے ملکی سیات میں نیا طوفان کھڑا کر دیاہے۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی حامد میر کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اور اپوزیشن دونوں کے لیے سب اچھا نہیں ہے۔عمران خان کے پاس ایسی ٹھوس دستاویزات موجود ہیں۔ اگر وہ منظرعام پر لے آئیں تو پاکستان ہی نہیں پوری دنیا میں ہنگامہ برپا ہو جائے گا لیکن مجبوریوں کی وجہ وہ انہیں سامنے نہیں لا سکتے۔اس طرح اپویشن کے معاملات کس کے ساتھ چل رہے ہیں وہ بھی نہیں بول سکتی۔انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان نے پچھلے دنوں ہلکا سا اشارہ دیتے ہوئے دو ملکوں کا ذکر کیا لیکن کہا میں ان کا نام نہیں بتا سکتا۔ ہمیں دعا کرنی چاہیے پاکستان میں نظام صحیح طرح چلتا رہے۔ نظام کو اندر سے ہی نہیں پاکستان کے باہر سے بھی خطرات ہیں۔قبل ازیں حامد میر نے مزید کہا کہ عمران خان کی وزرا کی ٹیم نے چوہدری برادران کے پاس جاکر سرنڈر کردیا ہے یہ آصف زرداری کی وجہ سے پرویزالہی کی بڑی کامیابی ہے، آصف زرداری اور پرویز الہی میں مسلسل رابطے میں ہیں، آصف زرداری چاہتے ہیں پنجاب اور بلوچستان میں تبدیلی کے بعد اسلام آباد میں تبدیلی لائی جائے۔

سینئر تجزیہ کار و اینکر پرسن کے مطابق سابق وزیر اعظم نوازشریف کو یقین تھا کہ بڑی طاقتیں عمران خان کو ہٹا دیں گی، لیکن ایسا ہوا نہیں، اب پی ڈی ایم کے سربراہی اجلاس میں لانگ مارچ اور دھرنوں اور استعفوں کی طرف جانے کی بات کی جائے گی، درمیانی راستہ نکالنے کی بھی کوشش کی جائے گی اگر درمیانی راستہ نہ نکلا توہوسکتا ہے کہ مسلم لیگ ن اور جے یوآئی ف، قوم پرست جماعتیں، پیپلزپارٹی کو چھوڑ کر خود استعفوں کا اعلان کردیں۔ انہوں نے کہا کہ جب وزیراعظم کہتے ہیں کہ مہنگائی کم ہوگئی ہے،لیکن ایسا نہیں ہے، یہاں ملازمین مہنگائی کیخلاف احتجاج کررہے تھے، متاثرین مہنگائی نے 10فروری سے دھرنے کا اعلان کیا ہے۔ عمران خان سے جب کچھ اہم لوگ ہفتے میں دوتین بار جاکر ملاقات کرتے ہیں توان کا ایجنڈا یہی ہوتا ہے کہ مہنگائی قابو سے باہر اوربہت زیادہ ہوگئی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button