پاکستان

2018ء کے سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ، وفاقی وزیر اسد عمر نے حیران کن جواب دے دیا‘ اپوزیشن بھی چونک کر رہ گئی

سینیٹ الیکشن میں بولیاں لگنا شروع ہوگئی ہیں، اس گھناؤنے کھیل میں حکومت کے پاس بہت سے ہتھیار ہیں لیکن انہیں استعمال نہیں کرنا چاہتے ہیں

2018ء کے سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ، وفاقی وزیرمنصوبہ بندی اسد عمر نے حیران کن جواب دے دیا‘ جس کے بعد اپوزیشن بھی چونک کر رہ گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں بولیاں لگنا شروع ہوگئی ہیں، اس گھناؤنے کھیل میں حکومت کے پاس بہت سے ہتھیار ہیں لیکن انہیں استعمال نہیں کرنا چاہتے ہیں، سینیٹ الیکشن کیلئے آئین میں ترمیم کی تجویز اس جوڑ توڑ کے خلاف موثر ہتھیار ہے۔ گزشتہ سینیٹ الیکشن میں تحریک انصاف کے اراکین صوبائی اسمبلی کے ووٹ بیچنے اور پیسے وصول کرنے کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا کہ یہ کوئی نئی خبر نہیں ہے کیونکہ ہم ہمیشہ یہ سنتے آئے ہیں کہ سینیٹ الیکشن میں ضمیر کی بولی لگتی ہے اور ضمیر بیچے بھی جاتے ہیں۔ اس ویڈیو کے بعد یہ بتانا ضروری ہے کہ جمہوریت کی طاقت کسی ٹینک، توپ خانے یا بندوقوں سے نہیں آتی بلکہ جب عوام اسے اپنے لیے بہتر سمجھتے ہیں تو یہ مضبوط ہوتی ہے، اخلاقی قوت سے جمہوریت مضبوط ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سینیٹ الیکشن میں منڈیاں لگتی ہیں، پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم)کے اندر موجود جماعتوں کے بیانات ہی سن لیے جائیں تو پتہ چلتا ہے کہ ماضی میں سینیٹ الیکشن کیسے جیتے جاتے رہے ہیں، انہوں نے میثاقِ جمہوریت میں یہ فیصلہ کیا تھا کہ سینیٹ الیکشن شفاف طریقے سے ہوں گے، احسن اقبال نے بھی کہا کہ سینیٹ الیکشن شفاف ہونے چاہئیں لیکن جب اس اصولی موقف کو حقیقت میں بدلنے کا وقت آیا تو یہ کہہ رہے ہیں کہ بہت بڑی سازش ہو رہی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button