پاکستانفیچرڈ پوسٹ

سینیٹ کی سیٹ کے لئے سودے بازی کیسے ہوتی ہے؟ بولیاں کیسے لگتی ہیں؟ بکنے اور خریدنے کا سلسلہ کب سے جاری ہے؟ قمر زمان کائرہ نے نیا کٹا کھول دیا

سینیٹ سیٹ کیلئے جو کوئی بھی بڑی بولی لگاتا ہے وہی جیت جاتا ہے، سینیٹ سیٹ کی خرید و فروخت اور سرکاری عہدے لینے کے لیے مختلف مرحلے ہوتے ہیں

سینیٹ کی سیٹ کے لئے سودے بازی کیسے ہوتی ہے؟ بولیاں کیسے لگتی ہیں؟بکنے اور خریدنے کا سلسلہ کب سے جاری ہے؟ قمر زمان کائرہ نے نیا کٹا کھول دیا۔

تفصیلات کے مطابق انہوں نے کہا کہ دنیا میں شفافیت کا نظام آچکا ہے لیکن پاکستان میں سینیٹ سیٹ کے لیے خرید و فروخت پرانا کھیل ہے جو ابھی بھی جاری ہے، یہ خرید و فروخت سیاست پر بدنما داغ ہے۔ واضح رہے کہ سینیٹ انتخابات سے قبل 2018 کے سینیٹ انتخابات میں اراکین اسمبلی کی خرید و فروخت کی بھی ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس پر ایکشن لیتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے خیبرپختونخواہ کے وزیر قانون سلطان خان سے ویڈیو اسکینڈل میں مبینہ ملوث ہونے پر مستعفی ہونے کی ہدایت کی تھی، سینیٹ انتخابات سے قبل گذشتہ سینیٹ انتخابات میں اراکین اسمبلی کی خرید و فروخت کی اس ویڈیو کے لیک ہونے کی ٹائمنگ کو خاصی اہم قرار دیا جا رہا ہے۔

دوسری جانب پاکستان میں سینیٹ انتخابات کا شیڈول جاری کر دیا گیا، الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ملک میں سینیٹ الیکشن 3 مارچ کو ہوں گے، الیکشن کمیشن کے بیان کے مطابق سینیٹ الیکشن کے لیے پولنگ 3 مارچ کو ہو گی، الیکشن کمیشن نے سینیٹ انتخابات کے لیے شیڈول جاری کرتے ہوئے بتایا کہ سینیٹ الیکشن کے لیے کاغذات نامزدگی 12 سے 13 فروری تک جمع کروائے جا سکیں گے، نامزد امیدواروں کے نام 14 فروری کو لگائے جائیں گے جس کے بعد سینیٹ انتخابات کے لیے امیدواروں کی جانب سے جمع کروائے جانے والے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال 15 اور 16 فروری کو ہوگی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button