پاکستان

نوازشریف پر سینیٹ کے انتخابات جیتنے کی دھن سوار، ووٹوں کی خریداری کے لئے ایسا قدم اٹھا لیا کہ سننے والے بھی ہکا بکا رہ گئے، بڑی خبر سامنے آگئی

سینیٹ الیکشن میں اکثریت حاصل کرنے کے لیے حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ٹھن گئی ہے اور پرانی اے ٹی ایم کو بھی یاد کیا جا رہا ہے

نوازشریف پر سینیٹ کے انتخابات جیتنے کی دھن سوار، ووٹوں کی خریداری کے لئے ایسا قدم اٹھا لیا کہ سننے والے بھی ہکا بکا رہ گئے، بڑی خبر سامنے آگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ الیکشن میں اکثریت حاصل کرنے کے لیے حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ٹھن گئی ہے۔پرانی اے ٹی ایم کو بھی یاد کیا جا رہا ہے اور سیاسی رشتہ داریوں کے علاوہ اصل رشتہ داریاں بھی آڑے آنے کے علاوہ ضمیر کے ووٹ کی بات بھی کی جار ہی ہے مگر بات یہ ہے کہ کیا سینیٹ میں آنے کے لیے اتحاد ہی کافی ہیں یا پھر چاروں صوبوں کے ایم پی ایز کروڑوں روپے خرچ کر کے الیکشن اس لیے جیتتے ہیں کہ وہ ضمیر کی آواز پر لبیک کہتے ہوئے سینیٹ الیکشن میں ووٹ دے کر اپنی ذمہ داری سے آزاد ہو جائیں۔

حالیہ دنوں میں گزشتہ سینیٹ الیکشن کی جو ویڈیوز منظر عام پر آئی ہیں وہ تو اس بات کی غمازی کرتی نظر آتی ہیں کہ سینیٹ الیکشن کا ووٹ سوائے پیسے کی جھنکار کے اور کسی آواز پر نہیں دیا جاتا۔ تاہم سینیٹ الیکشن کے حوالے سے بات کرتے ہوئے سینئر صحافی عارف حمید بھٹی نے اپنے پروگرام میں نے انکشاف کیا کہ اس وقت سینیٹ کی ایک سیٹ ایک سے ڈیڑھ ارب کے درمیان بک رہی ہے۔ اور ایک شخص دو دو تین تین جگہوں سے پیسے لے رہا ہے کیونکہ پیسوں کے لیے اسلام آباد اور راولپنڈی کے درمیان سے بھی ایک راستہ نکلتا ہے۔انہوں نے واضح کیا کہ نواز شریف صاحب نے سینیٹ الیکشن میں سیٹیں لینے کے لیے بے بہا پیسا بہانے کا منصوبہ بنا لیا ہے اور انہوں نے پیسوں کی تجوریاں ہی نہیں بلکہ بینکوں کے منہ کھول دیے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button