پاکستان

سینیٹرمشاہداللہ خان کو سپرد خاک کردیا گیا

مسلم لیگ ن کےسینیٹرمشاہداللہ خان مرحوم دسمبر 2020 میں شدید علیل ہوگئےتھے

مسلم لیگ (ن) کےسینیٹراورنوازشریف کےقریبی ساتھی مشاہداللہ خان انتقال کرگئے،ان کی نمازجنازہ اسلام آباد میں ادا کردی گئی ہے۔ جس میں پارٹی کےمرکزی رہنماوں سمیت مختلف شعبہ زندگی سےتعلق رکھنےوالےافراد نےشرکت کی۔ مسلم لیگ ن کےسینیٹرمشاہداللہ خان مرحوم دسمبر 2020 میں شدید علیل ہوگئےتھےجن کو اسلام آباد کےمقامی ہسپتال میں داخل کروایا گیا،سینیٹرمشاہداللہ خان اڑھائی ماہ تک ہسپتال میں زیرعلاج رہےتاہم گزشتہ رات ان کی طبعیت بگڑگئی اوروہ حالق حقیقی سےجا ملے۔

سینیٹرمشاہداللہ خان کی نمازجنازہ ادا کرنےکےبعد انکی تدفین ایچ الیون کےقبرستان میں کی گئی۔ نمازجنازہ میں چئیرمین سینیٹ صادق سنجرانی، وزیراعظم آزادکشمیرفاروق حیدر،مسلم لیگ ن کے رہنماوں شاہد خاقان عباسی،راجہ ظفرالحق ،اقبال ظفرجھگڑا، سردارایاز صادق، مصدق ملک، جے یوآئی کےرہنما مولانا عطاالرحمان،پیپلزپارٹی کےرہنما مصطفیٰ نوازکھوکھرسمیت زندگی کےمختلف شعبوں سےتعلق رکھنےوالےافراد نےشرکت کی۔

مسلم لیگ (ن) کےصدرشہبازشریف نےمشاہداللہ خان کےانتقال پرافسوس کا اظہارکیا۔ مریم نوازنےکہا کہ سینیٹرمشاہداللہ خان کےانتقال کی خبر سن کردھچکا لگا،ان کا انتقال مسلم لیگ ن کےلیےبڑا نقصان ہے۔ مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب،شاہد خاقان عباسی سمیت دیگر رہنماوں نےمشاہد اللہ خان کےانتقال پرافسوس کا اظہارکیا۔ صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی ،مولانافضل الرحمان وزیراطلاعات شبلی فراز،پیپلزپارٹی کےچئیرمین بلاول بھٹوزرداری سمیت سیاسی شخصیات نےسینیٹرمشاہداللہ کے انتقال پرتعزیت کااظہارکیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button