پاکستان

بلاول بھٹو نےاوپن بیلٹ کی حمایت کردی مگرکیوں؟

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹونے کہا ہے کہ ہم اوپن بیلٹ کیلئے بھی تیارہیں

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹونے کہا ہے کہ ہم اوپن بیلٹ کیلئے بھی تیارہیں، آپ الیکشن کی تیاری پکڑیں،یہ قبول نہیں عمران نیازی کو دھاندلی سےجتوایا جائے، فوٹوشاپ ویڈیوبھی سازش ہے،پی ڈی ایم سینیٹ الیکشن میں حکومت کوشکست دے گی۔انہوں نے کراچی میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ ضمنی انتخابات میں ہمارے امیدواروں کی لیڈ کوسلیکٹڈ اورسلیکٹرزبھی پریشان ہوگئے ہیں، جہاں بھی ضمنی انتخابات ہوئےحکومت کوعبرت ناک شکست دی ہے،پہلے وہ بڑے سکون سےبیٹھے تھے،کہ اپوزیشن ضمنی الیکشن اورسینیٹ کا بائیکاٹ کردیں گے،لیکن پی ڈی ایم نے وہ سیاسی کارڈ کھیلےکہ حکومت ضمنی انتخابات اورسینیٹ الیکشن کیلئے پریشان ہے۔ انشاء اللہ پی ڈی ایم سینیٹالیکشن میں بھی حکومت کوشکست دے گی۔

حکومت عام انتخابات سینیٹ کی وجہ سے اتنے پریشان ہیں کہ ہرادارے کو متنازع بنا رہے ہیں، کبھی وہ بندوق الیکشن کمیشن اور سپریم کورٹ کے کندھوں پر رکھ کرچلانا چاہتے ہیں مگر جب تک جمہوری حکومتیں موجود ہیں ہم الیکشن میں کسی کو دھاندلی کی اجازت نہیں دیں گے، سینیٹ انتخابات میں کسی کو دھاندلی کی ہمت نہیں ہونی چاہیے۔

اگر اوپن بیلٹ زبردستی ہوا تو سینیٹ میں ارکان سے ان کے ووٹ کا حق چھینا جائے۔ اگر حکومت کی اکثریت ہے، اور وہ اپنے ارکان پر اعتماد کرتے ہیں تو پھر وہ چور دروازوں سے کیوں آنا چاہتے ہیں آمنے سامنے آکر جمہوری مقابلہ کریں ۔پی ٹی آئی نے اپنے ہی امیدواروں کیخلاف صدارتی ریفرنس سپریم کورٹ میں بھیجا ہے، وہ اپنے ہی ارکان پر اعتماد نہیں کررہے، وہ کیوں اعتماد کریں گے؟ ان کو نظرآرہا ہے کہ عمران خان کی حکومت جارہی ہے، کراچی سندھ میں لوگ پیپلزپارٹی میں آرہے ہیں ہمیں ٹکٹ بھی دیں ہم الیکشن لڑیں گے۔

جب عوام کے ووٹ پر ڈاکا ڈالا گیا تھا تو کسی نے سوموٹو نوٹس لیا تھا؟ جب 2018ء کے الیکشن میں تاریخ کی بدترین دھاندلی ہورہی تھی ، جب سارے پاکستان کی سیاسی جماعتیں چیخ چیخ کرکہہ رہی تھیں کہ ایک سیاسی جماعت کیلئے سب کچھ کیا جارہا ہے۔جب زبردستی امیدواروں کو توڑا گیا، اس وقت کسی نے سوموٹو نوٹس کیوں نہیں لیا؟

متعلقہ خبریں

Back to top button