پاکستان

جہانگیر ترین کی سیاست میں واپسی کن شخصیات کے کہنے پر ہوئی؟ ہنگامہ خیز خبر سامنے آنے کے بعد قومی سیاست میں طوفان برپا ہوگیا

وزیراعظم اس وقت منڈیوں کی بات اس لیے کر رہے ہیں کیونکہ وہ پارٹی کے اندرونی اختلافات سے گھبرائے ہوئے ہیں اور پھر جہانگیر ترین کو بھی واپس بلایا گیا

پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء جہانگیر ترین کی سیاست میں واپسی کن شخصیات کے کہنے پر ہوئی؟ ہنگامہ خیز خبر سامنے آنے کے بعد قومی سیاست میں طوفان برپا ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ انتخابات میں کامیابی کو یقینی بنانے کے لیے حکومتی جماعت پاکستان تحریک انصاف نے جہانگیر ترین سے مدد طلب کی تھی، اس ضمن میں وزیراعظم عمران خان کا بھی جہانگیر ترین سے رابطہ ہو چکا ہے۔ صحافی و تجزیہ کار عمران یعقوب خان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے آج بھی سینیٹ انتخابات میں منڈیوں کی بات کی، مجھے ذاتی طور پر لگتا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اس وقت منڈیوں کی بات اس لیے کر رہے ہیں کیونکہ وہ پارٹی کے اندرونی اختلافات سے گھبرائے ہوئے ہیں اور پھر جہانگیر ترین کو بھی واپس بلایا گیا۔ عمران یعقوب خان نے کہا کہ ہمارے واقفان حال کے مطابق جہانگیر ترین کی واپسی صرف حفیظ شیخ کے کہنے پر نہیں ہوئی بلکہ وزیراعظم عمران خان اور جہانگیر ترین کی ٹیلیفون پر بات چیت ہوئی جس میں عمران خان نے کہا کہ آپ اپنے دوست کی مدد کریں۔

تجزیہ کار عمران یعقوب خان نے مزید کہا کہ جہانگیر ترین تو ایک طرف بیٹھے ہوئے تھے اور اچانک سے وہ اور ان کا جہاز ایکٹو ہو گیا اور لاہور آ گئے اور جہاں جہاں ان کی بات ماننے والے لوگ موجود ہیں انہوں نے ان سے رابطہ کیا۔ سینیٹ الیکشن میں اوپن بیلٹ کے صدارتی ریفرنس کی سپریم کورٹ میں سماعت سے متعلق بات کرتے ہوئے عمران یعقوب خان نے کہا کہ حکومت تو صرف اس لیے سپریم کورٹ گئی کہ آپ ہمیں صرف اس صدارتی ریفرنس سیمتعلق بتائیں لیکن اگر آئین کی بات کریں تو اس میں موجود ہے کہ جتنے الیکشن ہوں گے وہ سیکرٹ بیلٹ سے ہی ہوں گے لیکن آئین میں سینیٹ کے الیکشن کا طریقہ کار درج نہیں ہے اور سینیٹ کا طریقہ کار الیکشن ایکٹ کے مطابق ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button