پاکستان

نوشہرہ کے ضمنی انتخابات میں مبینہ باقاعدگیاں، نتائج روکنے کیلئے پی ٹی آئی نے درخواست دیدی

حلقہ پی کے 63 کا الیکشن مسلم لیگ نے انتخابی عملے کیساتھ ملکر چوری کرلیا‘ فارم 45 اور فارم46 میں بڑے پیمانے پر گھپلوں کا انکشاف ہوچکا ہے

خیبر پختونخوا اسمبلی کے حلقہ پی کے63 نوشہرہ کے ضمنی انتخاب میں مبینہ بے قاعدگیوں کے خلاف پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی)نے الیکشن کمیشن میں درخواست دائرکردی۔

تفصیلات کے مطابق حلقہ پی کے 63 سے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار میاں عمر کاکا خیل نے 19 فروری کے انتخابات کے نتائج کو مسترد کرتے ہوئے الیکشن کے تیسرے روز الیکشن کمیشن آف پاکستان میں نتائج روکنے کے لیے درخواست دائرکردی ہے۔ درخواست میں 40 پولنگ اسٹیشنز میں بے انتطامی اور بے قاعدگیوں کا الزام عائد کیا گیا ہے۔ وزیردفاع پرویز خٹک کا دعویٰ ہے کہ انتخابی عملے کی ملی بھگت سے پی ٹی آئی کو جیتا ہوا الیکشن ہروایا گیا۔

پاکستان تحریک انصاف کے امیدوارمیاں عمر کاکا خیل نے کہا کہ حلقہ پی کے 63 کا الیکشن مسلم لیگ نے انتخابی عملے کے ساتھ مل کر چوری کرلیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ فارم 45 اور فارم46 میں بڑے پیمانے پر گھپلوں کا انکشاف ہوچکا ہے، تقریبا 6000 جعلی ووٹ ڈالیں گئے ہیں، اضافی بیلٹ پیپر کہاں سے آئے؟ فارم 45 میں جو نتائج دکھائیگئے ہیں اور فارم 46 میں جوووٹ کی کاپیاں ملی ہے اس میں بہت بڑا فرق نکلا ہے۔ میاں عمر کا کہنا تھا کہ دونوں فارمز کی مصدقہ نقول حاصل کرکے الیکشن کمیشن میں رٹ دائر کردی گئی ہے، مذکورہ نتائج روک کر نئے سرے سے الیکشن کرایا جائے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button