پاکستان

‘ آپ کی ہمت کیسے ہوئی عدالت سے ایسے بات کرنے کی؟’

سپریم کورٹ نے محکمہ سیاحت سندھ میں غیر قانونی ٹھیکے لینے والے ملزم عبدالمجید سومرو اور دیگر ملزمان کی درخواست ضمانت خارج کردی۔

سپریم کورٹ میں محکمہ سیاحت سندھ میں غیر قانونی ٹھیکوں سے متعلق کیس کی سماعت جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نےکی وکیل ملزم نے عدالت کو بتایا کہ میرے موکل پرکام نہ کرنےکا بے بنیاد الزام لگایا جا رہا ہے،کام مکمل کرنے کی سی ڈی بھی موجود ہے، جس کو ریکارڈ کا حصہ نہیں بنایا جا رہا۔جسٹس منیب اختر نے نیب پراسیکیوٹر سے سوال کیا کہ کیا نیب نے سی ڈی دیکھی ہے؟

نیب پراسیکیوٹر نے جواب دیاسی ڈی کا انویسٹی گیشن آفیسر سے پوچھیں، جس پر جسٹس منیب اختر نیب پراسیکیوٹر کے جواب پر برہم ہوگئے،کہا آپ کس انداز میں عدالت سے بات کر رہے ہیں؟ انویسٹی گیشن آفیسر سے کیوں، چئیرمین نیب کو بلا کر کیوں نا پوچھ لیں؟ آپ کی ہمت کیسے ہوئی عدالت سے ایسے بات کرنے کی، جس پر نیب پراسیکیوٹر نے عدالت سے معذرت کرلی۔

وکیل ملزم نے استدعا کی کہ ملزمان کو عدالت سے گرفتار نہ کریں، کراچی میں خود گرفتاری دیں گے، عدالت نے ملزمان کو اسلام آباد کے بجائے کراچی سے گرفتار کرنےکا حکم دیتے ہوئے درخواست واپس لینے کی بنیاد پر خارج کردی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button