پاکستانفیچرڈ پوسٹ

عمران حکومت عوام کو سہولیات دینے میں بری طرح ناکام، آٹا مافیاکے بعد شوگر مافیا کے آگے گھٹنے ٹیکنے پر مجبور، ماہ رمضان سے پہلے چینی کا بڑا بحران

ملک بھر کے یوٹیلیٹی اسٹورز پر 2 روز سے چینی غائب ہے اور شہری کھلی مارکیٹ سے 30 سے 35 روپے مہنگی چینی خریدنے پر مجبور ہیں

عمران حکومت عوام کو سہولیات دینے میں بری طرح ناکام، آٹا مافیاکے بعد شوگر مافیا کے آگے گھٹنے ٹیکنے پر مجبور، ماہ رمضان سے پہلے چینی کا بڑا بحران شدت اختیار کر جائے گا۔

ذرائع کے مطابق ملک بھر کے یوٹیلیٹی اسٹورز پر 2 روز سے چینی غائب ہے اور شہری کھلی مارکیٹ سے 30 سے 35 روپے مہنگی چینی خریدنے پر مجبور ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یوٹیلیٹی اسٹورز پر چینی کی قیمت 68 روپے فی کلو مقررہے تاہم 2 روز سے چینی غائب ہونے کی وجہ سے شہری پریشان ہیں جب کہ اسٹورز حکام کو آئندہ 7 روز تک چینی نہ ہونے کا بتایا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن کے پاس اس وقت چینی موجود نہیں ہے، یوٹیلیٹی اسٹورز مقامی سطح پر چینی خریدنے میں ناکام رہا تھا جس کے باعث چینی کی خریداری کے لیے6 ٹینڈرجاری کیے گئے لیکن چھٹے ٹینڈرپرصرف 20 ہزار میٹرک ٹن چینی کا سودا ہوسکا۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ مقامی سطح پر خریدی گئی چینی کی دستیابی میں مزید ایک سے دو ہفتے لگ سکتے ہیں جب کہ ٹی سی پی یوٹیلیٹی اسٹورز کی جانب سے درآمدی چینی کا ٹینڈر 2 مارچ کو کھولے گا اور درآمدی چینی کا سودا ہونے کے بعد بھی چینی کی دستیابی میں دو ہفتے لگ سکتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button