پاکستان

حکومت ملک چلانے میں ناکام ہو چکی ہے؟ جسٹس فائز عیسیٰ کا دعویٰ

پاکستان چلانے کی بنیاد ہی مردم شماری ہے، کیا مردم شماری کے نتائج جاری کرنا حکومت کی ترجیح نہیں؟

سپریم کورٹ کے جسٹس فائزعیسیٰ قاضی نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان حکومت ملک چلانے میں ناکام ہو چکی ہے کیونکہ اس میں فیصلہ کرنے کی ہمت نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے حکومت کی جانب سے مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس 2 ماہ سے نہ بلائے جانے پر شدید برہمی کا اظہار کیا ہے۔ سپریم کورٹ میں بلدیاتی انتخابات کیس کی سماعت کے دوران دو رکنی بینچ کے سربراہ جسٹس قاضی فائز عیسی نے ریمارکس دیے کہ پاکستان چلانے کی بنیاد ہی مردم شماری ہے، کیا مردم شماری کے نتائج جاری کرنا حکومت کی ترجیح نہیں؟ تین صوبوں میں حکومت کے باوجود کونسل میں ایک فیصلہ نہیں ہو رہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عدالتی حکم کے باوجود اجلاس ملتوی ہونا آئینی ادارے کی توہین ہے، حکومت ملک چلانے کی اہل نہیں ہے یا فیصلے کرنے کی۔ جسٹس قاضی فائز عیسی نے کہا کہ کوئی جنگ تو نہیں ہو رہی تھی جو اجلاس نہیں ہوسکا، اب تو ویڈیولنک پر بھی اجلاس ہوسکتا ہے۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس 24 مارچ کو ہوگا، حساس معاملہ ہے حکومت اتفاق رائے سے فیصلہ کرنا چاہتی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button