پاکستان

"انتہا پسندوں کی دھمکیاں”۔۔۔سینکڑوں ہندو پاکستان واپس واپس آگئے

بھارت جانے والے ہندو خاندانوں سمیت 124 پاکستانی شہری ایک سال سے بھی زائدعرصے کے بعد بھارت سے واپس لوٹ آئے ہیں۔

پاکستان سے مختلف اوقات میں کئی ہندوخاندان اپنے رشتے داروں سے ملنے انڈیا گئے تھے۔ یہ ہندوخاندان بھارت کے مختلف شہروں میں طویل مدتی ویزے پرمقیم تھے اورانہیں امید تھی کہ بھارتی حکومت انہیں شہریت دے گی ۔ تاہم بھارتی خفیہ ایجنسیوں کے رویوں اورانتہا پسند ہندووں کی طرف سے ملنے والی دھمکیوں کے بعد یہ ہندوخاندان واپس پاکستان لوٹ رہے ہیں۔

گزشتہ روز بھارت سے 124 پاکستانی شہری واہگہ بارڈرکے راستے واپس لوٹے جن میں 80 سے زائد ہندوتھے ان کا تعلق اندرون سندھ کے مختلف اضلاع سے ہے۔

بھارت سے واپس آنے والے ہندوخاندانوں کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ یہ نئی دہلی سمیت مختلف شہروں میں انتہائی کس مپرسی کی زندگی گزاررہے تھے۔ کئی خاندان ایسےتھے جوجھگیوں میں رہتے تھے جہاں انہیں تعلیم، صحت، پینے کے صاف پانی سمیت کوئی بنیادی سہولت میسرنہیں تھی۔ پاکستانی ہونے کی وجہ سے ان لوگوں کو مزدوری بھی نہیں دی جاتی تھی۔

ہندو فیملیز کے مطابق انہیں بھارتی خفیہ ایجنسیاں ہراساں کرتی تھیں جب کہ اونچی ذات کے انتہاپسندہندو دھمکیاں دیتے تھے۔ پاکستان چھوڑکرجانا ان کی بہت بڑی غلطی ہے لیکن اب شکرہے کہ وہ واپس اپنے وطن آگئے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button