پاکستان

حکومت ایک بار پھر فلاپ‘ آئی ایم ایف نے ایک بار پھر پاکستان پر قبضہ کرنے کی منصوبہ بندی مکمل کرلی‘ محب وطن شہریوں کے لئے تشویشناک خبر سامنے آگئی

آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستان کو دیے جانے والے بیل آوٹ پیکج کے تحت 50 کروڑ ڈالر کی قسط جاری کرنے کی منظوری دے دی گئی

حکومت ایک بار پھر فلاپ‘ آئی ایم ایف نے ایک بار پھر پاکستان پر قبضہ کرنے کی منصوبہ بندی مکمل کرلی‘ محب وطن شہریوں کے لئے تشویشناک خبر سامنے آگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف)کی جانب سے پاکستان کو دیے جانے والے بیل آوٹ پیکج کے تحت 50 کروڑ ڈالر کی قسط جاری کرنے کی منظوری دے دی گئی ہے۔ یاد رہے کہ 50 کروڑ ڈالر کی قسط پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان اس سٹاف لیول معاہدے پر اتفاق کے بعد جاری کی جا رہی ہے، جس پر اس سال فروری کے مہینے میں دونوں اطراف نے باہمی اتفاق کیا تھا۔ 50 کروڑ ڈالر کی قسط پاکستان کو ایکسٹینڈڈ فنڈ فیسلیٹی (ای ایف ایف) کے تحت جاری کی جا رہی ہے۔ آئی ایم ایف اور پاکستان نے جولائی 2019 میں اس پر دستخط کیے تھے جس کے تحت پاکستان کو آئی ایم ایف کی جانب سے چھ ارب ڈالر کے قرضے کی منظوری دی گئی تھی تاکہ ملک کی بیرونی ادائیگیوں کے ساتھ ساتھ پائیدار اقتصادی ترقی کو مدد فراہم کی جا سکے۔

اس پروگرام کے تحت اب تک پاکستان کو دو قسطوں میں 1.5 ارب ڈالر کی رقم وصول ہو چکی ہے۔ آئی ایم ایف کا پاکستان سے موجودہ پروگرام اس وقت التوا کا شکار ہو گیا تھا جب گزشتہ برس فروری میں پاکستان نے آئی ایم ایف شرائط کے تحت پاور سیکٹر کے نرخوں میں مزید اضافے کو جون کے مہینے تک ملتوی کرنے کا کہا تھا جس کی وجہ سے آئی ایم ایف کا اس پروگرام پر دوسرا نظرثانی جائزہ نہیں ہو سکا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button