پاکستان

میں وطن واپس آنے کے لئے تیار ہوں لیکن مجھے یقین دہانی کروائی جائے کہ یہ کام نہیں ہوگا‘ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کا دھواں دھار بیان آگیا

نواز شریف نے اپنے بھائی شہباز شریف کے تحت اہم لوگوں کو یہ پیغام دیا ہے کہ وہ واپس آنے کیلئے تیار ہیں لیکن انہیں گرفتار نہ کیا جائے

میں وطن واپس آنے کے لئے تیار ہوں لیکن مجھے یقین دہانی کروائی جائے کہ یہ کام نہیں ہوگا‘ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کا دھواں دھار بیان آگیا۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی و تجزیہ کار عارف حمید بھٹی نے دعوی کیا ہے کہ ن لیگ کے قائد نواز شریف نے پاکستان واپسی کیلئے بڑی شرط رکھ دی ہے۔ سینئر صحافی کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے اپنے بھائی شہباز شریف کے تحت اہم لوگوں کو یہ پیغام دیا ہے کہ وہ واپس آنے کیلئے تیار ہیں لیکن انہیں گرفتار نہ کیا جائے۔ دوسری جانب لیگی ترجمان محمد زبیر نے بتایا کہ نواز شریف اپنی صحت کی وجہ سے نہیں بلکہ فیئر ٹرائل نہ ہونے کی وجہ سے وطن واپس نہیں آ رہے، میاں نواز شریف کو فیئر ٹرائل نہیں ملا، یہ بات کرکے لیگی رہنما محمد زبیر نے عدالتوں پر سوال اٹھا دیا ہے. یہاں پر یہ امر بھی قابلِ ذکر ہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما عطااللہ تارڑ نے کہا ہے کہ آپ جتنے اوچھے ہتھکنڈے اپنائیں گے اتنی نیب کی بات ہوگی، ہمارا پر امن احتجاج اور اظہار یکجہتی ہرحال میں ہوگا جبکہ مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ کرائے کے ترجمان، لوٹا بریگیڈ آج کل اخلاقیات، سیاسی اتحاد پر بات کرتی ہے،شہبازشریف کو جیل میں میڈیکل رپورٹ تک رسائی نہ دو، یہ گھٹیا اور چھوٹی حرکت ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button