پاکستان

ایف آئی اے چینی اور سٹہ مافیا کے خلاف کیا کرنے جا رہا ہے؟ اور اب تک کونسے کونسے اقدامات کیے جا چکے ہیں؟ چونکا دینے والا قدم اٹھا لیا گیا‘ سب حیران رہ گئے

ایف آئی اے نے چینی سٹہ مافیا کے خلاف بائیو ڈیٹا رپورٹ تیار کرتے ہوئے انہیں 30 مارچ سے طلبی کے نوٹسز جاری کر دیئے ہیں

ایف آئی اے چینی اور سٹہ مافیا کے خلاف کیا کرنے جا رہا ہے؟ اور اب تک کونسے کونسے اقدامات کیے جا چکے ہیں؟ چونکا دینے والا قدم اٹھا لیا گیا‘ سب حیران رہ گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے نے17 ہزار 500 صفحات پر مشتمل سٹہ مافیا کے خلاف بائیو ڈیٹا رپورٹ تیار کر لی ہے، جس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سٹہ مافیا نے 110، بیلن روپے کا فراڈ کیا۔ ایف آئی اے ذرائع نے بتایا کہ سٹہ مافیا نے تین واٹس ایپ گروپ بنائے ہوئے تھے، ان گروپس میں پاکستان شوگر گروپ، دوسرا شوگر مرچنٹ گروپ اور تیسرا شوگر ٹریڈ گروپ تھا۔

ایف آئی کی رپورٹ کے مطابق سٹہ بازوں کو ایک سال کے دوران اندرون و بیرون ملک کی تمام ٹی ٹیز کی فہرست ہمراہ لانے کا حکم بھی دیا گیا ہے۔ عدم حاضری اور عدم تعاون کی صورت میں انہیں گرفتاری کا سامنا کرنا پڑے گا۔ شیخ عامر وحید (چوہدری شوگرگروپ)کو یکم اپریل، مستنصر گوگی (رمضان و العربیہ شوگرگروپ)کو 31 مارچ، ملک عباد (JDWشوگرگروپ)کو 30 مارچ، ملک ماجد (JDWشوگرگروپ)کو 31 مارچ، اسد بھایا (RYKشوگر گروپ)کو دو اپریل، اسلم بھلی (شریف /شمیم/ کنجوانی شوگر گروپ)کو 30 مارچ کو طلب کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق سٹہ مافیا ان تینوں گروپس کے ذریعے چینی بحران اور قیمتوں کا اتار چڑھا کرتا تھا، انہوں نے چینی کی مقررہ قیمت سے کئی گنا زیادہ قیمت پر فروخت کی، اور 69 روپے کلو والی چینی90 روپے میں فروخت کرتے رہے، سٹہ مافیا انہی تینوں واٹس ایپ گروپ کے ذریعے ملک بھر میں چینی اپنے ریٹس پر فروخت کرتے رہے۔ دریں اثنا ایف آئی اے نے چینی مافیا کے ارکان کو 30 مارچ سے ایف آئی اے لاہور آفس طلبی کے نوٹسز جاری کردیے۔ سٹہ بازوں کو تمام ذاتی و کاروباری بینک اکانٹس کی فہرست، بے نامی اکانٹس کی فہرست ہمراہ لانے اور سٹہ بازوں کو ایف بی آر/ ایمنیسٹی میں ظاہر کیے گئے تمام فیملی/ بے نامی اثاثہ جات کی فہرست ہمراہ لانے کا حکم دیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button