پاکستان

پاک بھارت تجارتی تعلقات بحالی کا امکانات روشن ہوگئے، کیا کیا درآمد کیا جائیگا؟ پتہ چل گیا

پاکستان نے بھارت سے چینی، کپاس اور دھاگا درآمد کرنے کی تیاری مکمل کرلی ہے‘ اجازت کے بعد سمریاں ای سی سی کو بھجوائی ہیں

پاک بھارت تجارتی تعلقات بحالی کا امکانات روشن ہوگئے، تعلقات بحال ہونے کے بعد کیا کیا درآمد کیا جائیگا؟ اس حوالے سے سب کچھ پتہ چل گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاک بھارت تجارتی تعلقات کی بحالی کے امکانات پیدا ہوگئے ہیں اور بھارت سے چینی، کپاس اور دھاگا درآمد کرنے کی تیاری کی جارہی ہے۔ ذرائع کے مطابق وزارت تجارت سمریاں منظوری کے لئے کل اقتصادی رابطہ کونسل (ای سی سی)میں پیش کرے گی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وزارت تجارت نے وزیراعظم کی اجازت کے بعد سمریاں ای سی سی کو بھجوائی ہیں۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ بھارت سے چینی ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان (ٹی سی پی)اور کمرشل درآمد کنندگان کے ذریعے درآمد کرنے کی تجویز ہے، اس وقت بھارت کے برآمدکنندگان ٹی سی پی کے ٹینڈرز میں حصہ نہیں لے سکتے کیونکہ بھارت کے برآمدکنندگان کی طرف سے ٹی سی پی کے ٹینڈرز میں حصہ لینے پر پابندی ہے۔ رپورٹ کے مطابق بھارت سے 30 جون2021 تک کپاس اور یارن(دھاگا)درآمد کرنے کی تجویز ہے،بھارت سے زمینی راستے کے ذریعے بھی کپاس اور یارن درآمد کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔ حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان کو کمی پورا کرنیکے لییکپاس درآمد کرنا پڑتی ہے، بھارت سے کپاس اور یارن کی درآمد سستی پڑے گی، کپاس کی پیداوار میں تاریخی کمی کے باعث یارن پر بھی دبا پڑا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button