پاکستان

لاہورمیں کورونا کا پھیلاؤ،وزیرصحت نےتہلکہ خیزدعویٰ کردیا

ڈاکٹریاسمین راشد کا کہنا ہےکہ اسمارٹ لاک ڈاؤن کےاثرات نظرآنا شروع ہوگئےہیں

صوبائی وزیرصحت ڈاکٹریاسمین راشد کا کہنا ہےکہ اسمارٹ لاک ڈاؤن کےاثرات نظرآنا شروع ہوگئےہیں،لاہورمیں کورونا وائرس کے پھیلاؤ میں آہستہ آہستہ کمی آ رہی ہے۔ پنجاب ڈاکٹریاسمین راشد نے بتایا کہ لاہورمیں ایس اوپیزکی خلاف ورزی پر جرمانے بھی کئے جا رہے ہیں۔ یاسمین راشد نےکہا کہ لاک ڈاؤن کرتےہیں تومعیشت کا پہیہ رکتا ہے،لاہورمیں کیے گئے اسمارٹ لاک ڈاؤن کےاثرات نظرآنا شروع ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دو روزبعد اجلاس ہےجس میں اسکولوں سے متعلق فیصلہ ہوگا۔ ڈاکٹریاسمین راشد کاکہنا تھا کہ پنجاب میں کورونا ٹیسٹ کی تعداد میں اضافہ کردیا گیا ہے۔

واضح رہےکہ پاکستان میں کورونا وائرس کی تیسری لہرجاری ہے،کورونا کی وباء کےباعث اسپتالوں پردباؤبڑھ گیا ہے،نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر(این سی اوسی) کےاعداد وشمارکےمطابق پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کےدوران کورونا وائرس کےمزید4 ہزار 323 کیسز سامنےآئےہیں، مزید 43 افراد اس موذی وباء کےسامنےزندگی کی بازی ہارگئے،اس بیماری سے 2 ہزار 902 مریض شفایاب ہوگئے،جبکہ مثبت کیسزآنےکی شرح 9.96 فیصد ہوگئی۔

ملک بھرمیں کورونا وائرس سےانتقال کرنےوالوں کی مجموعی تعداد 14 ہزار821 ہوگئی ہے،جبکہ کُل مریضوں کی تعداد 6 لاکھ 92 ہزار 231 ہوچکی ہے۔ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کےمزید 43 ہزار362 ٹیسٹ کیئےگئے،جبکہ اب تک کُل 1 کروڑ 4 لاکھ 46 ہزار697 کورونا ٹیسٹ کیےجاچکےہیں۔ ملک بھرمیں اسپتالوں،قرنطینہ سینٹرزاورگھروں میں کورونا وائرس کےکُل 61 ہزار 450 مریض زیرِعلاج ہیں،جن میں سے 3 ہزار 587 مریضوں کی حالت تشویش ناک ہے،جبکہ 6 لاکھ 15 ہزار 960 مریض اب تک اس بیماری سےشفایاب ہو چکےہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button