پاکستان

کاشتکاری میں نمایاں کمی کے بعد اب ملک میں کپاس کا بحران بھی سر اٹھانے لگاملک میں تاریخ کی بدترین قلت پیدا ہوگئی؟ کاٹن کے بحران نے بھی سر اٹھا لیا

گزشتہ سال 85 لاکھ گانٹیں حاصل ہوئی تھیں تاہم اس سال فروری تک صرف 56 لاکھ گانٹیں حاصل کی جاسکی ہیں

کاشتکاری میں نمایاں کمی کے بعد اب ملک میں کپاس کا بحران بھی سر اٹھانے لگاملک میں تاریخ کی بدترین قلت پیدا ہوگئی؟ کاٹن کے بحران نے بھی سر اٹھا لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں گزشتہ سال کے مقابلے میں کپاس کی پیداوار میں 34 فیصدکمی آئی ہے جس کی وجہ سے اس وقت کاٹن کی تاریخی قلت کا سامنا ہے۔ پنجاب اور سندھ میں کاٹن کی پیداوارمیں بالترتیب 34 اور 38 فیصد کمی دیکھنے میں آئی ہے۔ گزشتہ سال 85 لاکھ گانٹیں حاصل ہوئی تھیں تاہم اس سال فروری تک صرف 56 لاکھ گانٹیں حاصل کی جاسکی ہیں۔ پنجاب کے مختلف اضلاع میں کپاس کی کاشت شروع ہوگئی ہے۔ پنجاب حکومت کا ہدف ہے کہ اس سال پنجاب میں تقریبا 40 لاکھ ایکڑ رقبے پرکپاس کاشت کیے جانے کا ہدف ہے۔ پنجاب حکومت کی طرف سے کپاس کے کاشتکاروں کے لئے بیج، کھاد اور وائٹ فلائی کی تلفی کے لئے زہروں میں سبسڈی کا اعلان کیاہے۔

مقامی کاشتکار چوہدری محمدخالد نے ٹربیون سے بات کرتے ہوئے کہا وہ پہلے 25 ایکڑرقبے پرکپاس کاشت کرتے تھے تاہم اس سال 50 ایکڑرقبے پرکپاس کاشت کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا حکومت نے کپاس کی کاشت پرجو سبسڈی کا اعلان کیا ہے اگر وہ مل جاتی ہے تو وہ آئندہ سال سے کپاس کی کاشت کا رقبہ مزید بڑھا دیں گے اوردوسری فصلیں کم کردیں گے۔ محمد خالد کے مطابق ماضی میں کپاس کے شعبے کو نظرانداز کیا گیا جس کی وجہ سے انہوں نے کپاس کاشت کرنا انتہائی کم کردی تھی۔ ان کے مطابق غیرمعیاری بیج، مہنگی کھاد اور زرعی ادویات اورپھرموسمیاتی تبدیلیوں نے کپاس کی پیداوار کو کم کیا ہے۔ ایک اور کاشتکار محمدفاروق کاکہنا ہے حکومت اگرکاشتکاروں کو کھاد،بیج، زرعی ادویات، زرعی مشینری پر سبسڈی اوردیگرسہولتیں فراہم کرے تو ہمیں بھارت سے کپاس امپورٹ نہیں کرنا پڑے گی۔ بھارت میں کسانوں کو بجلی پرسبسڈی دی جاتی ہے، ان کے لاگت ہمارے مقابلے میں کم ہے جبکہ بیج کی کوالٹی بہترہونے کی وجہ سے فی ایکڑپیداواربھی زیادہ ہے،اگرپاکستانی کسانوں کو یہ سہولتیں دی جائیں توہم کپاس سمیت دیگر اجناس کی پیداوارمیں خود کفیل ہوسکتے ہیں

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads. because we hate them too.