پاکستانفیچرڈ پوسٹ

پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں پھوٹ کب پڑی، کون چاہتا تھا کہ اس سیاسی اتحاد کا شیرازہ بکھر جائے؟ لکھاری نے حقیقت بیان کر کے سب کو حیران کر دیا

اتحاد میں شامل 10 سیاسی جماعتوں میں سے ایک عوامی نیشنل پارٹی پہلے ہی اس تحریک سے الگ ہونے کا اعلان کرچکی ہے

پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں پھوٹ کب پڑی، کون چاہتا تھا کہ اس سیاسی اتحاد کا شیرازہ بکھر جائے؟ لکھاری نے حقیقت بیان کر کے سب کو حیران کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حزبِ اختلاف پر مشتمل جماعتوں کے اتحاد ‘پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم)کے وجود پر اب خطرے کے بادل منڈلا رہے ہیں۔ اتحاد میں شامل 10 سیاسی جماعتوں میں سے ایک عوامی نیشنل پارٹی پہلے ہی اس تحریک سے الگ ہونے کا اعلان کرچکی ہے۔ پیپلزپارٹی اگرچہ اتحاد کا حصہ بنی ہوئی ہے لیکن سینیٹ میں یکطرفہ طور پر قائدِ حزب اختلاف کے عہدے پر اپنے نامزد امیدوار یوسف رضا گیلانی کو مقرر کروانے پر پی ڈی ایم کی جانب سے ملنے والے وضاحتی خط پر اپنی برہمی کا برملا اظہار کرچکی ہے۔

اطلاعات کے مطابق پیپلزپارٹی نے پی ڈی ایم کے ایک اجلاس میں حزبِ اختلاف کا عہدہ مسلم لیگ (ن)کے لیے چھوڑنے پر اتفاق کیا تھا۔ اس سے پہلے اتحاد میں شامل بقیہ 9 جماعتوں کے برعکس پیپلزپارٹی لانگ مارچ کے ساتھ اسمبلیوں سے استعفوں کو جوڑنے کے خیال کی مخالفت بھی کرچکی تھی۔ پی ڈی ایم نے اپنے بنیادی منشور اور مقاصد میں جن 26 نکات کو شامل کیا تھا ان میں اتحاد کا سب سے اہم مقصد یہ تھا کہ اپوزیشن قیادت کو مبینہ طور پر نشانہ بنائے جانے کے عمل کا مقابلہ کرنے کے لیے پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی)کی حکومت پر عوامی دباؤ ڈالا جائے۔ اگرچہ حزبِ اختلاف جماعتوں کا واضح مقصد وزیرِاعظم عمران خان اور ان کی حکومت کا خاتمہ تھا لیکن اگر حکومت حزبِ اختلاف کے ساتھ کام کرنے کے لیے تیار ہوتی تو پی ڈی ایم اس کے ساتھ چلنے میں کوئی حرج محسوس نہ کرتی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads. because we hate them too.