پاکستانفیچرڈ پوسٹ

پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں اختلافات، مولانا فضل الرحمن نے پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کو دن میں تارے دکھا دیئے

پیپلز پارٹی اور اے این پی کے جانے کے بعد ن لیگ بھی موجودہ حکومت کے خلاف کوئی انتہائی اقدام یا تحریک شروع کرنے سے گریزاں ہے

پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں اختلافات، مولانا فضل الرحمن نے پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کو دن میں تارے دکھا دیئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی حکومت کے خلاف تحریک چلانے والی پی ڈی ایم بڑی سیاسی جماعتوں کی اپنی حکمت عملی اور سیاسی روڈ مپ کے باعث غیر مؤثر ہوکررہ گئی ہے۔ پیپلز پارٹی اور اے این پی کے جانے کے بعد اب مسلم لیگ ن بھی موجودہ حکومت کے خلاف کوئی انتہائی اقدام یا تحریک شروع کرنے سے گریزاں ہے جبکہ پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان بجٹ سے قبل جس طرح کی سیاسی تحریک چلانے کے خواہاں تھے اس میں انہیں کامیابی نہیں مل رہی۔

پی ڈی ایم کے ذرائع کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان ن لیگ کے صدر شہباز شریف کو عمران حکومت کے خلاف کوئی فیصلہ کن تحریک چلانے پر رضا مند نہیں کر سکے۔ شہباز شریف اور ان کا دھڑا پاکستان تحریک انصاف کے خلاف کوئی عملی قدم اٹھانے کی بجائے صرف زبانی جمع خرچ کی پالیسی پر گامزن ہے جس کے بعد مولانا فضل الرحمان نے پیپلز پارٹی اور اے این پی کے بعد مسلم لیگ ن کی پالیسیوں سے دلبرداشتہ ہو کر اپنی جماعت کو متحرک کرنے کے لیے ملک گیر دوروں کا آغاز کر دیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.