پاکستان

پارلیمانی کمیٹی قومی سلامتی کے اجلاس میں کیا کچھ ہوا؟اندرونی کہانی منظر عام پر

 پارلیمانی کمیٹی برائے قومی سلامتی کے گزشتہ روز ہونے والے اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی۔ 

کھوج ذرائع کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے خطاب کیا اور ڈی جی آئی ایس آئی نے شرکا کو قومی سلامتی کے معاملے پر بریفنگ دی جب کہ اجلاس میں بلاول بھٹو، شہباز شریف، شاہد خاقان عباسی اور یوسف رضا گیلانی نے گفتگوکی، سیاسی قائدین نے عسکری قیادت سے افغانستان کی صورتحال پر کئی سوال کیے۔

ذرائع کے مطابق کچھ سیاسی قائدین نے آرمی چیف سے براہ راست سوالات کیے، آرمی چیف نے براہ راست پوچھے جانے والے سوالات کے خود جواب دیئے، اپوزیشن کے سوالات پر ڈی جی آئی ایس آئی اور شاہ محمود قریشی نے جواب دیئے۔

عسکری قیادت نے اجلاس کوبریفنگ میں کہا کہ افغان مسئلے پرنیوٹرل رہنا چاہتے ہیں، افغانستان میں کسی ایک گروپ کی طرف نہیں جاناچاہتے، افغان عوام جس کو منتخب کریں، ہم وہاں گھسنا نہیں چاہتے، پارلیمان فیصلہ کرے ہم نے کیا کرنا ہے۔

اجلاس کو یہ بھی بتایا گیا کہ چین اور امریکا کے معاملے پرکسی کیمپ میں نہیں، ہم نیوٹرل پالیسی پرعمل پیرا ہیں۔

 بریفنگ میں بتایا گیا کہ افغان تنازع کے باعث 5 سے7 لاکھ پناہ گزینوں کی پاکستان آمد متوقع ہے، افغان پناہ گزینوں کو سرحدی علاقوں تک محدود رکھاجائےگا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.