پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ملک بھر میں بڑھتی ہوئی لوڈشیڈنگ کا اصل ذمہ دار کون؟ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بڑے راز سے پردہ اٹھا دیا، عمران حکومت سرپکڑ کر بیٹھ گئی

آج گردشی قرضہ اڑھائی ہزار ارب سے زیادہ ہوگیا ہے، بجلی کی مد میں دو سو ارب دیا گیا ہے، یہ پیسہ عوام ادا کریں گے

ملک بھر میں بڑھتی ہوئی لوڈشیڈنگ کا اصل ذمہ دار کون؟ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بڑے راز سے پردہ اٹھا دیا، عمران حکومت سرپکڑ کر بیٹھ گئی۔

تفصیلات کے مطابق شاہد خاقان عباسی کاکہنا تھا کہ وزرانے ایل این جی کے حوالے سے کوئی پلاننگ نہیں کی،ا س حکومت کا ایک وزیر کہتا رہا ہے ن لیگ کے دور حکومت میں لگائے گئے پلانٹس سے بجلی وافر مقدار میں پیدا ہورہی ہے اورٹرمینل میں اضافی کیپسٹی موجود ہے، ایل این جی ٹرمینل کی کپیسٹی بیچنے کے لئے ٹینڈر دیا گیا لیکن دوسرے وزیر نے کہاکہ ایل این جی ٹرمینل میں کپیسٹی موجود نہیں ہے اوراب ایل این جی کی شارٹیج کرکے مہنگا فرنس آئل خریدا جارہاہے،وزرا جھوٹ پر جھوٹ بولتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ آج پورے پاکستان میں سات سات گھنٹے کی شدید لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے مگر کسی کو پراہ نہیں ہے، توانائی کے سات وزیر تبدیل ہو چکے ہیں،سب کو نااہلی اور نالائقی کی بنیاد پر نکالا گیا ہے، وزرا کو یہ نہیں پتاکہ کون سے پلانٹ ایل این جی پرچلتے ہیں اور کونسے فرنس آئل پر چلتے ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ (ن)کے سینئر رہنما اور سابق وزیرا عظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ نوازشریف کے دور حکومت میں لگائے جانے والے تین ایل این جی پلانٹس سستی ترین بجلی بنارہے ہیں، آج گردشی قرضہ اڑھائی ہزار ارب سے زیادہ ہوگیا ہے، بجلی کی مد میں دو سو ارب دیا گیا ہے، یہ پیسہ عوام ادا کریں گے، ہم آج بھی ملک کے مسائل اور انکے حل جانتے ہیں،آج بھی ہم سے پوچھے ایل این جی کے کتنے شپس چاہئے ہم بتادیں گے۔نالائق اور کرپٹ حکومت کا بوجھ عوام کو برداشت کرنا پڑ رہا ہے، حکومتی نااہلیوں کی وجہ سے عوام لوڈشیڈنگ کے عذاب میں مبتلاہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.