پاکستان

شوہر حق مہر میں لکھی ہوئی چیزیں دینے کا پابند ؛ہائیکورٹ کا اہم فیصلہ

لاہور ہائیکورٹ ملتان بینچ نے حق مہر میں لکھے گئے پانچ مرلے کا گھر بیوی کو دینے کا ٹرائل کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھا ہے جبکہ فیصلہ کالعدم قرار دینے کی شوہر کی اپیل مسترد کردی۔

مظفر گڑھ کے رہائشی محمد قیوم نے ریحانہ شمس کے ساتھ نکاح نامے میں حق مہر کے خانے میں تین تولے طلائی زیور اور پانچ مرلے کا گھر لکھا اور بعد میں دینے سے انکار کردیا تھا۔بیوی نے گھر اپنے نام کرانے کیلئے ٹرائل کورٹ سے رجوع کیا جہاں ٹرائل کورٹ نے بیوی کی استدعا منظور کرتے ہوئے فیصلہ اس کے حق میں دے دیا۔شوہر نے ٹرائل کورٹ کے فیصلے کے خلاف ہائیکورٹ ملتان بینچ میں اپیل دائر کی۔

ہائیکورٹ ملتان بینچ نے درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے مسترد کردی اور فیصلہ سنایا کہ نکاح نامے میں حق مہر کے خانے میں درج چیزیں بیوی کو دینے کا اگر وقت متعین نہیں تو شوہر بیوی کی ڈیمانڈ پر اسے دینے کا پابند ہے۔

جسٹس انوار حسین نے لکھا کہ شوہر حق مہر میں لکھی گئی ہر چیز بیوی کو دینے کا پابند ہے اور حق مہر میں لکھی گئی کسی بھی چیز سے شوہر کواستثنیٰ نہیں دیا جاسکتا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.