پاکستان

اینٹی ریپ آرڈیننس، پراسیکیوٹر جنرل اور ڈپٹی ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹرز تعینات

تعیناتیوں کا نوٹیفکیشن جاری کردیا جس کے مطابق پنجاب میں 112 پراسیکیوٹر جنرل اور ڈپٹی ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹرز تعینات کیا گیا ہے

اینٹی ریپ آرڈیننس 2020 پر عملدرآمد کے معاملے پر پنجاب میں پراسیکیوٹر جنرل اور ڈپٹی ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹرز تعینات کر دیئے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزارت قانون و انصاف نے تعیناتیوں کا نوٹیفکیشن جاری کردیا جس کے مطابق پنجاب میں 112 پراسیکیوٹر جنرل اور ڈپٹی ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹرز تعینات کیا گیا ہے۔ پراسیکیوٹرزکی تعیناتی اینٹی ریپ آرڈیننس 2020 کے سیکشن7کے تحت کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ دسمبر 2020 میں صدر مملکت عارف علوی نے انسدادِ ریپ آرڈیننس کی منظوری دی تھی۔ آرڈیننس سے عورتوں اوربچوں کے خلاف جنسی زیادتی کے معاملات جلد نمٹانے میں مدد ملے گی اور آرڈیننس کے تحت جنسی زیادتی کے ملزمان کے تیز ٹرائل کیلئے ملک بھر میں اسپیشل عدالتیں قائم کی جائیں گی۔ خصوصی عدالتیں 4 ماہ کے اندر جنسی زیادتی کے کیسز کو نمٹائیں گی جبکہ آرڈیننس کے تحت وزیراعظم انسداد جنسی زیادتی کرائسز سیلز کا قیام عمل میں لائیں گے جو 6 گھنٹے کے اندر میڈیکو لیگل معائنہ کرانے کا مجاز ہوگا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.