پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ہم بنگلہ دیش سے موازنہ کرنے پر اعتراض کرتے تھے لیکن اب تو ہم یوگنڈا اور ایتھوپیا سے بھی …………؟ ایم کیو ایم نے حکومت کی اینٹ سے اینٹ بجا دی

ضروری ہے کہ جب ترقی نے اس خطہ میں دستک دی تو ہم اس کیلئے تیار نہ تھے اور بنگلہ دیش اس کیلئے تیار تھا اور وہ ترقی کر گیا

ہم بنگلہ دیش سے موازنہ کرنے پر اعتراض کرتے تھے لیکن اب تو ہم یوگنڈا اور ایتھوپیا سے بھی …………؟ ایم کیو ایم نے حکومت کی اینٹ سے اینٹ بجا دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینئر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ ہم بنگلہ دیش سے مقابلے پر اعتراض کرتے تھے، آج ہم یوگنڈا اور ایتھوپیا سے بھی پیچھے رہ گئے۔ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ ہمارا مسئلہ یہ ہے کہ ہماری کوئی سمت نہیں ہے، یہاں دو پاکستان ہیں۔ جناح کا پاکستان اور بھٹو کا پاکستان، کونسا پاکستان بہتر تھا مکمل پاکستان یا آدھا پاکستان۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں سیاست کرنے کی نہیں سیاست بدلنے کی ضرورت ہے۔1998میں چین میں غربت کی شر ح 40 فیصد اور ہندوستان میں 55 فیصد اور آج یہ شرح بالترتیب 1فیصداور 15فیصد رہ گئی ہے اور ایک زمانے میں پاکستان کا تقابلی جائزہ کینیا اور یوگینڈا سے کیا تو لوگوں نے اس پر اعتراض کیا لیکن آج میں پاکستان کا تقابلی جائزہ ایتھوپیا اور روانڈاسے کرنے جا رہا ہوں اس تاریخ کو نوٹ کرنا ہوگا پاکستان کا مستقبل آپ نوجوانوں سے جڑا ہوا ہے آپ نے خوف اور ڈر کو نکال کر آگے بڑھنا ہے کیوں کہ جب تک ہم اپنے آپ کو بدلنے کا ارادہ نہ کریں تو خدا بھی ہمارے حالات تبدیل کرنے کیلئے تیار نہیں ہوتا، آج کے اس سیشن میں سیاسی گفتگو کا محل نہیں لیکن یہ ضروری ہے کہ جب ترقی نے اس خطہ میں دستک دی تو ہم اس کیلئے تیار نہ تھے اور بنگلہ دیش اس کیلئے تیار تھا اور وہ ترقی کر گیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.