پاکستان

پاکستان کے کون سے علاقہ میں قبروں پر طالبان کے جھنڈے لہرا دیئے گئے؟ لرزہ خیز رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد سب چونک کر رہ گئے

قلعہ عبداللہ سے چمن جاتے ہوئے روڈ کے دونوں اطراف ایسی متعدد قبریں موجود جن پر عمارات اسلامی افغانستان کے سفید جھنڈے لہرا رہے ہیں

پاکستان کے کون سے علاقہ میں قبروں پر طالبان کے جھنڈے لہرا دیئے گئے؟ لرزہ خیز رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد سب چونک کر رہ گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چمن کے ایک مقامی شخص کا کہنا ہے کہ ایک طالب ہے جو قندھار کے قریب طالبان کی افغان سکیورٹی فورس کے خلاف لڑائی کا حصہ ہے۔ احمد کا کہنا ہے کہ وہ اب سے کچھ دیر قبل افغانستان سے چمن لوٹے ہیں اور قندھار کے قریب ہونے والی لڑائی میں زخمی ہونے والے اپنے ساتھیوں کو علاج کے لیے اور ہلاک ہونے والے ساتھیوں کو تدفین کے لیے چمن لائے ہیں۔ احمد نے بتایا کہ بولدک پر قبضے کے بعد آج صبح افغان سکیورٹی فورسز نے طالبان کے خلاف آپریشن شروع کیا لیکن اس آپریشن میں افغان ایئر فورس کا استعمال نہیں کیا گیا۔ افغان سکیورٹی فورسز کے اس آپریشن میں خبررساں ادارے روئٹرز کے انڈیا سے تعلق رکھنے والے صحافی دانش صدیقی سمیت کئی سکیورٹی اہلکار ہلاک ہوئے۔ احمد کا کہنا ہے کہ اس لڑائی میں کچھ طالبان ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوئے۔ انہی زخمیوں میں سے چند کو چمن علاج کے لیے لایا گیا ہے۔

احمد (فرضی نام) کا کہنا تھا کہ افغانستان میں ہلاک ہونے والے طالبان کے جنازے افغانستان سرحد سے متصل بلوچستان کے علاقوں میں تدفین کے لیے لائے جاتے ہیں اور ان جنازوں میں شرکت کرنے والوں کو نہ صرف افغان جہاد کا حصہ بننے کی ترغیب دی جاتی بلکہ ہلاک ہونے والے مقامی طالبان کو مرکزی روڈ کے قریب دفن کر کے ان کی قبروں کو سفید جھنڈے سے اس لیے نمایاں بنایا جاتا ہے تاکہ انھیں دیکھ کر مقامی افراد کی حوصلہ افزائی ہو۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.