پاکستان

نور مقدم قتل کیس، ایس ایس پی انوسٹی گیشن کا قاتل کے متعلق حیران کن انکشاف

لڑکی کے بہیمانہ قتل کیس کے ملزم چاہے ذہنی مریض ہو یا نشہ کرنے والا، پولیس اتنا جانتی ہے کہ ملزم نے زیادتی کی

اسلام آباد پولیس کے ایس ایس پی انویسٹی گیشن نے قاتل کے متعلق حیران کن انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ نور مقدم کو قتل کرنے والے ملزم کو جب پکڑا تو وہ مکمل ہوش و حواس میں تھا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس ایس پی) انوسٹی گیشن عطاء الرحمان نے کہا کہ لڑکی کے بہیمانہ قتل کیس کے ملزم چاہے ذہنی مریض ہو یا نشہ کرنے والا، پولیس اتنا جانتی ہے کہ ملزم نے زیادتی کی اور اس وقت وہ ہوش و حواس میں تھا۔ انہوں نے بتایا کہ گرفتاری سے پہلے ملزم نے ایک شخص کو زخمی بھی کیا۔

تفتیشی افسر کا کہنا تھاکہ ملزم یا اس کا باپ کتنا ہی بااثر کیوں نہ ہو، سب تسلی رکھیں، پولیس کام کر رہی ہے اور تمام شواہد کے ساتھ چالان پیش کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ شواہد کی اہمیت ملزم کے بیان سے زیادہ اہم ہوگی، متاثرہ فیملی کے ساتھ کھڑے ہیں اورانصاف دلائیں گے۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن کا کہنا تھاکہ پولیس کے فارنزک ماہرین نے موقع واردات سے تمام ثبوت اکٹھیکر لیے ہیں، ابتدائی تحقیقات کے مطابق نور مقدم دو دنوں سے اپنے گھر پر نہیں تھی جس کی تحقیقات کی جارہی ہیں، ایک رہائشی کی جانب سے تھانے میں وقوعہ کے متعلق کال کی گئی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.