پاکستان

آزاد کشمیرانتخابات، 45 نشستوں پر 742 امیدوارمدمقابل

قانون سازاسمبلی کی 45 نشستوں کےلیے 32 لاکھ سے زائد ووٹرز حق رائے دہی استعمال کر رہے ہیں

آزاد کشمیر انتخابات کے لیے پولنگ جاری ہے، قانون سازاسمبلی کی 45 نشستوں کےلیے 32 لاکھ سے زائد ووٹرز حق رائے دہی استعمال کر رہے ہیں جب کہ انتخابات میں 742 امیدوار حصہ لے رہے ہیں، پی ٹی آئی، ن لیگ اورپیپلزپارٹی کےدرمیان سخت مقابلے کی توقع ہے۔  آزاد کشمیرکی قانون سازاسمبلی کےلیے انتخابات آج ہو رہے ہیں۔ الیکشن کمیشن نے پولنگ کے لیے تمام انتظامات کوحتمی شکل دے دی۔ پولنگ میٹریل بھی ریٹرننگ افسران کو فراہم کردیا۔ ان نشستوں پر پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوئی جو بغیر کسی وقفے کے شام 5 بجے تک جاری رہے گی۔

آزاد کشمیر میں انتخابی عمل کو شفاف بنانے کے لیے پریذائیڈنگ آفیسرز سمیت 250 افسران کو مجسٹریٹ کے برابر اختیارات دیئے گئے ہیں۔ انتخابات میں آزاد کشمیر کے 33 حلقوں میں سابق وزرائے اعظم، سیاسی جماعتوں کے سربراہان وزارت عظمیٰ کی دوڑ میں شامل ہیں۔ گیلپ پاکستان کے سروے میں آزاد کشمیر کے 44 فیصد عوام نے الیکشن میں تحریک انصاف کی حمایت کی جبکہ 67 فیصدکشمیریوں نے وزیراعظم عمران خان کو اپنا پسندیدہ ترین لیڈر قرار دیا۔

آزاد کشمیر کے مہاجرین کے لیے لاہور کی دو نشستوں ویلی ٹو کشمیر اور جموں ون میں آج 9 ہزار چھ سو 31 ووٹرزاپنا حق رائے دہی استعمال کر رہے ہیں۔ ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر نے تمام انتظامات کو حتمی شکل دے دی۔ ان دو نشستوں پر 6 ایس پیز، 18 ڈی ایس پیز،25 ایس ایچ اوز تعینات ہیں۔ ۔پولنگ بوتھ پر 700 پولیس جوانوں کے ساتھ 100 لیڈیز اہلکار بھی چیکنگ کے فرائض سر انجام دے رہے ہیں۔

علاوہ ازیں سندھ بلوچستان میں آزاد کشمیر کے عام انتخابات کے لیے 2 حلقوں حلقہ ایل اے 40 وادی 1 اور ایل اے 34 جموں 1 پر مہاجرین کی دونوں نشستوں پر انتخابات آج ہو رہے ہیں۔ ایل اے 34 سندھ، بلوچستان اور پنجاب کے 48 اضلاع پر مشتمل ہے جبکہ ایل اے 40 سندھ اور بلوچستان کے 24 اضلاع پر مشتمل حلقہ ہے۔ مجموعی طور پردونوں نشستوں پرمختلف جماعتوں کے 21 امیدوار مدمقابل ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.