پاکستان

بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں میں اوور بلنگ کا انکشاف، نئی بحث چھڑ گئی

لیسکو میں 46 بیچز میں سے 6 میں اوور بلنگ ہوئی اور گیپکو میں 36 میں سے 7بیچز میں اوور بلنگ ہوئی ہے

بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کی اوور بلنگ ثابت ہوگئی ہے جس کے بعد ملک بھر میں نئی بحث چھڑ گئی ہے۔ وفاقی وزیر توانائی نے جانچ پڑتال کا حکم دیا تھا۔

ذرائع کے مطابق پاور انفارمیشن ٹیکنالوجی کمپنی نے اپنی رپورٹ پاورڈویژن کو جمع کرادی۔ پی آئی ٹی سی کی رپورٹ کے مطابق لیسکو میں 46 بیچز میں سے 6 میں اوور بلنگ ہوئی اور گیپکو میں 36 میں سے 7بیچز میں اوور بلنگ ہوئی۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ فیسکو میں 30 میں سے 11 بیچز میں اووربلنگ ثابت ہوئی۔

واضح رہے کہ ذرائع نے بجلی کی تقسیم کارکمپنیوں کی 31 دنوں سے زیادہ کی اووربلنگ کا انکشاف کیا تھا جس پر وفاقی وزیر توانائی نے نوٹس لیتے ہوئے جانچ پڑتال کا حکم دیا تھا۔ تحقیقات کے مطابق 8 ماہ کے دوران ملتان، سکھر، کراچی، لاہور، حیدر آباد، گجرانوالہ اور فیصل آباد کے لاکھوں صارفین کو بجلی کے بل طے شدہ 31 روز کے بجائے 37 روز کی بنیاد پر کئی بار بھیجے گئے۔ ذرائع کے مطابق ان 8 ماہ کے دوران 37 روز کے دوران استعمال کی گئی بجلی کے سب سے زیادہ بل ملتان کی پاور کمپنی میپکو نے بھیجے۔ 31روز میں 300 یونٹ کا بل 3200 روپے بنتا ہے، لہذا اس طرح صرف ایک روز کے اضافے سے بلوں میں 600 روپے کا اضافہ ہوجا تا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.