پاکستانفیچرڈ پوسٹ

جسٹس (ر) جاوید اقبال کی بطور نیب چیئرمین مدت میں توسیع کا معاملہ، حکومتی وفاقی وزراء میں اختلافات کی خبروں نے قومی سیاست میں نیا طوفان برپا کر دیا

کل کو چیئرمین نیب سے مسئلہ ہو سکتا ہے، چیئر مین نیب کی تقرری کے طریقہ کار میں تبدیلی پر قانون سازی کی جائے لیکن توسیع نہیں

جسٹس (ر) جاوید اقبال کی بطور نیب چیئرمین مدت میں توسیع کا معاملہ، حکومتی وفاقی وزراء میں اختلافات کی خبروں نے قومی سیاست میں نیا طوفان برپا کر دیا ہے۔

کھوج نیوز ذرائع کے مطابق چیئرمین نیب جاوید اقبال کی ملازمت میں توسیع کے حق میں چند وزراء ابھی بھی دلائل دے رہے ہیں۔پی ٹی آئی کے کچھ وفاقی وزرا چیئرمین نیب کی مدت میں توسیع کے خلاف ہیں۔ان کے دلائل یہ بھی ہیں کہ چیئرمین نیب کچھ کمزور بھی ہیں اور اپنے چار برس کمل کر چکے۔ کچھ افسران بھی ان کے خلاف ہیں اور کہہ رہے ہیں کہ کل کو چیئرمین نیب سے مسئلہ ہو سکتا ہے۔اختلاف رائے کرنے والے وزرا کا کہنا ہے کہ چیئرمین نیب کی تقرری کے طریقہ کار میں تبدیلی پر قانون سازی کی جائے لیکن توسیع نہیں۔اس حوالے سے اتحادی جماعتوں کے وزرا اور پارٹی لیڈرز سے اب تک مشاورت نہیں کی گئی۔

ان جماعتوں میں ایم کیو ایم پاکستان، مسلم لیگ فنکشنل اور ق لیگ شامل ہیں۔تاہم قانون اور پارلیمانی امور کے وزرا کی رپورٹ کے بعد ہی وزیراعظم حتمی فیصلہ دو سے تین روز میں کریں گے۔دوسری جانب چیئرمین نیب جسٹس(ر)جاوید اقبال نے کہا ہے کہ جن کو ماضی میں کوئی ہاتھ نہیں لگا سکتا تھا نیب اب ان نکے خلاف کارروائی کر رہا ہے نیب اور پاکستان ساتھ چل سکتے ہیں تاہم پاکستان اور کرپشن ساتھ نہیں چل سکتے۔چند لوگ اپنی مبینہ بد عنوانی غیر قانونی اقدامات،اختیارات کے ناجائز استعمال، آ مدن سے زائد اثاثہ جات، منی لانڈرنگ اور قومی خزانہ نکو نقصان کے مقدمات میں نیب پر الزام تراشی کے پیچھے چھپنے کی ناکام کو ششں کررہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.