پاکستان

میرے والد کو جو مقام ملنا چاہیے تھا وہ نہیں دیا گیا‘ ڈاکٹر قدیر کی صاحبزادی آبدیدہ ہو گئیں

میری فیملی کے لیے یہ وقت بہت مشکل ہے‘ میرے والد کو جو ملنا چاہیے تھا وہ نہیں دیا گیا، امید ہے کہ آنے والے وقت میں میرے والد کو سراہا جائیگا

محسن پاکستان ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی صاحبزادی ڈاکٹر دینہ اپنے والد کے بارے بتاتے ہوئے آبدیدہ ہو گئیں کہ میرے والد کو جو مقام ملنا چاہیے تھا وہ نہیں دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق راولپنڈی میں ہائیکورٹ بار میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان کے لیے تعزیتی ریفرنس ہوا جس میں قرآن خوانی ہوئی۔مشیر وزیراعظم ڈاکٹر بابر اعوان اور ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی بیٹی دینہ خان نے ریفرنس میں شرکت کی۔ انہوں نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں بار کے تمام لوگوں کی شکر گزار ہوں کہ یہ پروگرام منعقد کیا،ڈاکٹر دینہ بات کرتے ہوئے آبدیدہ بھی ہو گئیں۔انہوں نے کہا کہ میری فیملی کے لیے یہ وقت بہت مشکل ہے۔میرے والد کو جو ملنا چاہیے تھا وہ نہیں دیا گیا۔امید ہے کہ آنے والے وقت میں میرے والد کے کام کو سراہا جائے گا۔

میرے والد کراچی میں زیر علاج تھے تو لوگ ان کے لیے پھول لے کر آتے تھے۔ میں تمام لوگوں کی شکر گزار ہوں کہ میرے والد کو اتنی عزت بخشی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر بابر اعوان نے کہاکہ ڈاکٹر عبدالقدیر خان اور ان کے بچے اس ملک کے محسن ہیں۔وزیراعظم عمران خان سے بات کرکے اسلام آباد کی اہم جگہ کا نام ڈاکٹر قدیر کے نام پر رکھیں گے۔واضح رہے کہ محسنِ پاکستان، ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر عبد القدیر خان گزشتہ ہفتے 85 برس کی عمر میں رضائے الہی سے انتقال کر گئے تھے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.