پاکستانفیچرڈ پوسٹ

مشیر خزانہ شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کے لئے وزیراعظم عمران خان کے کون سے قریبی ساتھی کی سیاسی قربانی لی جائے گی؟ نام سامنے آگیا، وزراء میں ہلچل مچ گئی

وفاقی حکومت نے مشیر خزانہ شوکت ترین کو خیبرپختونخوا سے سینیٹر بنانے کا فیصلہ کیا ہے‘اس سلسلے میں سینیٹر فیصل جاوید سے استعفیٰ لیے جانے کا امکان ہے

مشیر خزانہ شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کے لئے وزیراعظم عمران خان کے کون سے قریبی ساتھی کی سیاسی قربانی لی جائے گی؟ نام سامنے آگیا، وزراء میں ہلچل مچ گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے مشیر خزانہ شوکت ترین کو خیبرپختونخوا سے سینیٹر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔اس سلسلے میں سینیٹر فیصل جاوید سے استعفیٰ لیے جانے کا امکان ہے۔شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کے لیے فیصل جاوید سے سیاسی قربانی لی جائے گی۔ فیصل جاوید کے استعفیٰ دینے کے بعد انہیں معاون خصوصی بنایا جائے گا۔2024میں خیبرپختونخواہ سے پی ٹی آئی کے ریٹائر ہونے والے سینیٹر سے بھی استعفیٰ لیے جانے کی تجویز زیر غور ہے تاہم حتمی فیصلہ وزیراعظم عمران خان خود کریں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے شوکت ترین کو سینیٹر بنانے کی منظوری دی۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ کسی بھی غیر منتخب شخص کے لیے وفاقی وزیر رہنے کے لیے چھ ماہ میں رکن پارلیمنٹ بننا لازمی ہے۔ شوکت ترین کی آئینی مدت اکتوبر کے دوسرے ہفتے میں ختم ہوئی۔ شوکت ترین بطور وزیر کام جاری رکھیں اس کے لیے ان کو سینیٹر منتخب کروانا ایک قانونی تقاضا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ شوکت ترین کو خیبرپختونخواہ سے سینیٹ کی نشست پر منتخب کروایا جائے گا تاہم شوکت ترین کو سینیٹر منتخب کروانے کے لیے خیبرپختونخواہ سے کون سا سینیٹر استعفیٰ دے گا اس حوالے سے فیصلہ نہیں ہو سکا تھا۔ یہ خبر بھی موصول ہوئی تھی کہ وفاقی حکومت، شوکت ترین کو پنجاب سے سینیٹر اسحاق ڈار کی نشست پر سینیٹر منتخب کروانے کے لیے اپنے منصوبے کا اعلان کرے گی۔ یہ نشست مسلم لیگ ن کے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی غیر موجودگی کی وجہ سے تاحال خالی ہے اور اسحاق ڈار نے برطانیہ میں خود ساختہ جلاوطنی کی وجہ سے سنیٹ کی نشست کا حلف بھی نہیں اٹھایا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.