پاکستانفیچرڈ پوسٹ

ستمبر کے مہینے میں پاکستان آنے والی غیر ملکی سرمایہ کاری میں کمی ہوئی یا اضافہ کا رجحان رہا؟ امریکی کمپنیوں نے حکومتی دعوؤں کا بھانڈا بیچ چوراہے میں پھوڑ دیا

ستمبر میں ایف ڈی آئی 16فیصد اضافے سے 236ملین ڈالر تک پہنچ گئی جو ستمبر 2020 میں 202.8 ملین ڈالر تھی

ستمبر کے مہینے میں پاکستان آنے والی غیر ملکی سرمایہ کاری میں کمی ہوئی یا اضافہ کا رجحان رہا؟ امریکی کمپنیوں نے حکومتی دعوؤں کا بھانڈا بیچ چوراہے میں پھوڑ دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ستمبر میں پاکستان میں ہونے والی براہ راست بیرونی سرمایہ کاری کا حجم 236 ملین ڈالر رہا۔ 11 ماہ کے دوران یہ کسی ایک ماہ میں پاکستان میں ہونے والی سب سے زیادہ غیرملکی سرمایہ کاری ہے۔اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ نفع بخش مارکیٹ کے طور پر بیرونی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر اعتماد بحال ہورہا ہے۔ حیران کن طور پر ستمبر میں سب سے زیادہ سرمایہ کاری امریکی کمپنیوں نے کی۔ امریکی کمپنیوں کی جانب سے کی گئی سرمایہ کاری کا حجم 68.7 ملین ڈالر رہا۔ اگرچہ افغانستان میں بیس سالہ جنگ کے خاتمے کے بعد سے اسلام آباد اور واشنگٹن کے تعلقات مزید خراب ہوئے ہیں، اس کے باوجود امریکی کمپنیوں نے پاکستان میں سب سے زیادہ سرمایہ کاری کی ہے۔ زیادہ تر سرمایہ کاری آئی ٹی اور ٹیلی کمیونی کیشن کے شعبوں میں ہوئی ہے۔

بی ایم اے کیپیٹل کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر سعد ہاشمی نے کہا کہ ستمبر میں ایف ڈی آئی 16فیصد اضافے سے 236ملین ڈالر تک پہنچ گئی جو ستمبر 2020 میں 202.8 ملین ڈالر تھی۔ عارف حبیب لمیٹڈ کے ریسرچ ہیڈ طاہر عباس نے کہا کہ اکتوبر 2020 کے بعد سے یہ کسی ایک ماہ میں ہونے والی سب سے ز یادہ سرمایہ کاری ہے۔ مجموعی طور پر جولائی تا ستمبر میں ایف ڈی آئی کا حجم 439.1 ملین ڈالر ریکارڈ کیا گیا جو گذشتہ برس کی اسی مدت کے مقابلے میں 18.5 ملین ڈالر کم ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.