پاکستانفیچرڈ پوسٹ

وفاقی حکومت کا بجلی صارفین کے لئے رعایتی پیکیج مذاق بن کر رہ گیا، نیپرا نے اعتراضات کھڑے کر دیئے، عوام کو ایک بار پھر بے یارو مددگار چھوڑ دیا گیا

پیکیج کا اطلاق 300یونٹ سے زائد والے صارفین پر ہوگا جس میں کے الیکٹرک کیلئے ایک ارب 30 کروڑ روپے کی سبسڈی رکھی گئی ہے

وفاقی حکومت کا بجلی صارفین کے لئے رعایتی پیکیج مذاق بن کر رہ گیا، نیپرا نے اعتراضات کھڑے کر دیئے، عوام کو ایک بار پھر بے یارو مددگار چھوڑ دیا گیا ہے۔

ذرائع مطابق نیپرا کی جانب سے کہا گیا کہ رعایتی پیکیج نومبر سے فروری 2021کے عرصے کیلئے مانگا گیا ہے، پیکیج کا اطلاق 300یونٹ سے زائد والے صارفین پر ہوگا جس میں کے الیکٹرک کیلئے ایک ارب 30 کروڑ روپے کی سبسڈی رکھی گئی ہے، پیکج سے معاشی فوائد کیا ہوں گے، اسکا کا کوئی تجزیہ کیا گیاہے؟۔

پاور ڈویژن کے حکام نے بتایا کہ ہمارے پاس اضافی بجلی موجود ہے اور فراہم کرنے کی صلاحیت بھی۔ چیئرمین نیپر انے استفسار کیا کہ 12.96روپے فی یونٹ کس بنیاد پر نکالا گیاہے؟،جنوری میں کھپت زیادہ ہوئی تو ایل این جی کی طلب بڑھے گی۔ حکام کی جانب سے بتایا گیا کہ سردیوں میں بجلی کی کھپت کم ہوتی ہے، تمام ڈسکوز سے مل کر سٹریٹجک ایکشن پلان بنا رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.