پاکستانفیچرڈ پوسٹ

پاکستان میں چینی سرمایہ کاری کی آخری رسومات ادا کرنے کی تیاریاں، بلوچستان سمیت ملک کے تمام محب وطن عوام سر پکڑ کر رہ گئے، سی پیک کا بھی بوریا بستر گول

چین کی جانب سے پاکستان میں کی جانے والی سرمایہ کاری میں کمی جبکہ امریکہ سے پاکستان میں ہونے والی سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا ہے

پاکستان میں چینی سرمایہ کاری کی آخری رسومات ادا کرنے کی تیاریاں، بلوچستان سمیت ملک کے تمام محب وطن عوام سر پکڑ کر رہ گئے، سی پیک کا بھی بوریا بستر گول ہوتے ہوئے نظر آ رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کے مرکزی بینک کی جانب سے ملک میں بیرونی سرمایہ کاری کے حوالے سے جاری کردہ تازہ ترین اعداد و شمار میں انکشاف کیا گیا ہے کہ چین کی جانب سے پاکستان میں کی جانے والی سرمایہ کاری میں کمی جبکہ امریکہ سے پاکستان میں ہونے والی سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا ہے۔ موجودہ مالی سال کے پہلی سہ ماہی (جولائی تا ستمبر)کے اعداد و شمار ظاہر کرتے ہیں کہ اس دورانیے میں پاکستان میں چین کی جانب سے آنے والے سرمائے کی مالیت صرف دس کروڑ ڈالر رہی جو گذشتہ سال کے اسی دورانیے میں بیس کروڑ ڈالر سے زائد تھی۔ اسی طرح موجودہ سال کی پہلی سہ ماہی میں امریکہ کی جانب سے پاکستان میں آنے والی سرمایہ کاری کی مالیت دس کروڑ ڈالر سے زائد رہی جبکہ گذشتہ سال کی اسی سہ ماہی میں امریکی سرمایہ کاروں کی جانب سے پاکستان میں صرف دو کروڑ ڈالر لگائے تھے۔

چینی سرمایہ کاری میں کمی کی ایک بہت بڑی وجہ یہ بھی ہے کہ سی پیک کے پہلے مرحلے میں جاری انفراسٹرکچر اور توانائی کے بہت سارے منصوبوں پر کام مکمل ہو چکا ہے تحریک انصاف کے سیاسی مخالفین کی جانب سے جہاں سی پیک منصوبے پر وفاقی حکومت کی جانب سے کام کو سست کرنے کا الزام عائد کیا جاتا ہے مگر دوسری جانب سی پیک کے حوالے سے غیر جانبدار مبصرین اور معاشی تجزیہ کاروں کی رائے بھی اپوزیشن کے الزامات سے کچھ مختلف نہیں ہے۔ ماہرین کا ماننا ہے کہ چینی سرمایہ کاری میں کمی کی ایک بہت بڑی وجہ یہ بھی ہے کہ سی پیک کے پہلے مرحلے میں جاری انفراسٹرکچر اور توانائی کے بہت سارے منصوبوں پر کام مکمل ہو چکا ہے جبکہ جو منصوبے زیر تکمیل بھی ہیں ان کی مد میں سرمایہ کاری پہلے ہی موصول ہو چکی ہے۔ جبکہ دوسری جانب مسئلہ یہ ہے کہ موجودہ دور حکومت میں سی پیک کے تحت کسی بڑے منصوبے کا آغاز نہیں کیا گیا۔ دوسری جانب وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک)خالد منصور نے اس تاثر کو مسترد کیا کہ سی پیک پر کام سست روی کا شکار ہے، انھوں نے کہا کہ ان قیاس آرائیوں میں کوئی حقیقت نہیں ہے۔

پاکستان میں چینی سرمایہ کاری کا سب سے بڑا منصوبہ چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک)ہے جس میں سڑکوں، بجلی گھروں، ریلوے لائن اور صنعتی زونز کی تعمیر کے منصوبے شامل ہیں۔ پاکستان میں سابقہ حکومت یعنی مسلم لیگ نواز کے دور میں سی پیک کے منصوبے پر کام شروع ہوا تھا اور اس کے تحت بہت سارے منصوبوں کا افتتاح کیا گیا اور ان میں سے کچھ مکمل بھی ہوئے تاہم تحریک انصاف کے برسر اقتدار آنے کے بعد اس منصوبے پر کام میں سست روی کی شکایات کی بازگشت طویل عرصے سے جاری ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.