پاکستانفیچرڈ پوسٹ

کشمیر شوگر ملز کیس، سابق وزیراعظم نوازشریف کے رشتہ دار بھی حکومت کے ریڈار پر آگئے، ریاستی ادارے نے حیران کن قدم اٹھا لیا، سیاسی حلقوں میں طوفان برپا ہوگیا

نواز شریف کے رشتہ داروں کے نام ای سی ایل میں ڈالنے اور ملزمان کے پاسپورٹ اور شناختی کارڈز بھی بلاک کرنے کا حکم سنا دیا گیا

کشمیر شوگر ملز کیس، سابق وزیراعظم نوازشریف کے رشتہ دار بھی حکومت کے ریڈار پر آگئے، ریاستی ادارے نے حیران کن قدم اٹھا لیا، سیاسی حلقوں میں طوفان برپا ہوگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کشمیر شوگرملز کیس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے رشتہ داروں کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دے دیا گیا، بینکنگ کورٹ کا کہنا ہے کہ ملزمان کے پاسپورٹ اور شناختی کارڈز بھی بلاک کیے جائیں۔ اے آر وائی کی رپورٹ کے مطابق صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور کی بینکنگ عدالت میں کشمیر شوگر ملز کیس کی سماعت ہوئی، جہاں عدالت نے حکم جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب اورکوئی چارہ نہیں کہ ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالے جائیں اور ان کے پاسپورٹ و شناختی کار بھی ڈبلاک کیے جائیں، کیوں کہ ملزمان کو مختلف ذرائع سے طلبی کے سمن بھجوائیگئے لیکن ملزمان عدالت میں پیش ہونے کی بجائے بیرون ملک چلے گئے۔

بتایا گیا ہے کہ ملزمان میں حسنین طارق شفیع، یوسف زاہد اور عثمان جاوید شامل ہیں، جن کے بارے میں نجی بینک کے وکیل نے عدالت میں کہا کشمیر شوگر ملز مالکان نے 2013 میں قرض حاصل کیا، جس کی طارق شفیع، جاویدشفیع، ابراہیم طارق، زاہد اور علی پرویز نے گارنٹی دی جب کہ قرض کیلئے ملز مالکان نے چینی کی 2 لاکھ 17 ہزار 400 بوریاں رہن رکھوائیں لیکن ملزمان نے بینک کی ادائیگی سے بچنے کیلئے رہن شدہ اسٹاک چوری کرادیا، جس کے بعد قرض کی عدم ادائیگی پر کشمیر شوگر ملز کو 26 مارچ کو ڈیفالٹر قرار دیا گیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.