پاکستان

جسٹس (ر)) ثاقب نثارکو توہین عدالت کا نوٹس

اسلام آباد ہائی کورٹ نےنوازشریف اومریم نوازکی نیب ریفرنسزفیصلوں پرنظرثانی اپیلوں سےمتعلق انکشافات کا نوٹس لےلیا 

جسٹس (ر)) ثاقب نثارکو توہین عدالت کا نوٹس، چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہرمن اللہ نے نوازشریف اورمریم نوازکی اپیلوں سےمتعلق سابق جج کےانکشافات پرسابق سابق چیف جج گلگت بلتستان رانا شمیم اوردیگرکوتوہین عدالت کےنوٹس جاری کردیئےہیں۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نےسابق وزیراعظم نوازشریف اوران کی بیٹی مریم نوازکی نیب ریفرنسزفیصلوں پرنظرثانی اپیلوں سے متعلق انکشافات کا نوٹس لے لیا ہے۔

عدالتی ذرائع کے مطابق معاملے میں اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج کا نام آنے کے بعد اسلام آباد ہائی کورٹ نے صحافی انصار عباسی کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کا آغاز کردیا ۔ اس کے علاوہ سابق جج رانا شمیم کو بھی توہین عدالت کا نوٹس جاری کیا گیا ہے۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نےدوران سماعت اسلام آباد ہائی کورٹ جرنلسٹ ایسوسی ایشن کوکمرہ عدالت طلب کرلیا ،انہوں نےصدر اسلام آباد ہائی کورٹ جرنلسٹ ایسوسی ایشن سےاستفسارکیا کہ اس عدالت نےہمیشہ اظہاررائےکی قدرکی ہےاوراظہاررائےپریقین رکھتی ہے ، مجھےاس عدالت کےہرجج ہرفخرہے،اگراس عدالت کےغیرجانبدارانہ فیصلوں پراگراسی طرح انگلی اٹھائی گئی یہ اچھا نہیں ہے،یہ عدالت آپ سب سےتوقع رکھتی ہےکہ لوگوں کا اعتماد اداروں پربحال ہو،زیرسماعت کیسسزپراس قسم کی کوئی خبرنہیں ہونی چاہیے۔ اس عدالت کی آزادی کوکوئی مشکوک بنائےگا توبرداشت نہیں کیا جائےگا۔ عدالت نےتمام فریقین کومنگل کی صبح 10 بجےطلب کرلیا۔ ہائی کورٹ نےاٹارنی جنرل خالد جاوید خان کوبھی ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا۔

ایک مقامی انگریزی آخبارمیں خبرشائع ہوئی جس میں دعویٰ کیا گیا ہےکہ گلگت بلتستان کےسابق چیف جج رانا ایم شمیم نے 10 نومبر 2021 کو اوتھ کمشنرکےروبرواپنے حلفیہ بیان میں کہا ہےکہ چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثارنےہائی کورٹ کےایک جج کوحکم دیا تھا کہ 2018ء کےعام انتخابات سےقبل نوازشریف اورمریم نوازکو ضمانت پررہا نہ کیا جائے،جب دوسری جانب سے یقین دہانی ملی تو وہ (ثاقب نثار) پرسکون ہوگئےاورایک اورچائے کا کپ طلب کیا“۔

 

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.