پاکستان

اسٹیبلشمنٹ کواگراپنی عزت واحترام عزیزہےتو؟مولانا فضل الرحمان کی گھن گرج

تین سالوں میں حکومت نے 2قانون سازی کی ہے، ایک بین الاقوامی اداروں کی پاکستان پرگرفت مضبوط کی

اسٹیبلشمنٹ کواگراپنی عزت واحترام عزیزہےتو؟مولانا فضل الرحمان کی گھن گرج، پاکستان ڈیموکریٹک مووومنٹ کےصدرمولانا فضل الرحما ن نےکہا ہےکہ حکومت نےقانون سازی سےسیاست پراسٹیبلشمنٹ کی گرفت مزیدمضبوط کردی،اسٹیبلشمنٹ کوبتانا چاہتا ہوں اگرتمہیں اپنی عزت واحترام عزیزہےتوآپ کواس گندے کیڑے کےپیچھےسےہٹناہوگا، آئین کی اسلامی حیثیت کوختم کرنےکی کوشش کی اور ریاست مدینہ کےمقدس عنوان کے پیچھےچھپ رہے۔

انہوں نےپشاورمیں عوامی جلسے سےخطاب کرتے ہوئےکہا کہ ملک میں روزانہ کی بنیاد پرمہنگائی میں اضافہ ہورہا ہے،جہاں میرے اکابرین نےپاکستان میں مہنگائی کی صورتحال واضح کی ،قرضےکتنےزیادہ کردیے،کیا ہماری نسلیں ان قرضوں کواتارسکیں گی؟ پارلیمنٹ کے سامنےبچے برائےفروخت کیلئےلا رہےہیں،سندھ کےپولیس والےبچوں کوسڑک پرفروخت کرنے،بچوں کونہرمیں ڈالنےاورخودکشی کرنے والےلوگوں کی تعداد بڑھی رہی ہے،کیا آج یہ دن دیکھنےتھے؟ ہمیں ان حکمرانوں سےقوم کی جان چھڑوانا ہوگی۔

تین سالوں میں حکومت نے 2قانون سازی کی ہے، ایک بین الاقوامی اداروں کی پاکستان پرگرفت مضبوط کی ہے، جوہمارے ملک میں معاشی مشکلات کا سبب بنا ہے،تم نےسب کچھ مغرب کیلئےکیا، تم نےہماری تہذیب،ہماری معیشت کومغربی اداروں کا گروی بنا دیا، تم نےآج پھر ایک نئی قانون سازی کی،قانون سازی کےنتیجےمیں جہاں ہم جمہوریت اورعوام کےاختیارکی بات کرتےہیں،وہاں انہوں نےکل کی قانون سازی میں پاکستان کی سیاست پراسٹیبلشمنٹ کی گرفت کومزیدمضبوط کردیا ہے،یہ آمروں کےایجنٹ ہوسکتےہیں،یہ عوام کےنمائندے نہیں ہوسکتے۔

ہم بہت کچھ جانتےہیں انہوں نےاس ملک میں اسلامی تہذیب وتمدن اوراسلامی تشخص کو تباہ وبربادکرنے کی کوشش کی، آئین کی اسلامی حیثیت کو ختم کرنےکی کوشش کی ہے،پھرکبھی ریاست مدینہ کےمقدس عنوان کےپیچھےچھپنےکی کوشش کرتےہیں،منافقوں کوبتانا چاہتا ہے، تمہارا باپ بھی ان پردوں کے پیچھےنہیں چھپ سکتا،اب ہم نے تمہارے گریبان میں ہاتھ ڈال دیا ہے۔

اسٹیبلشمنٹ کو بتانا چاہتا ہوں اگر تمہیں اپنی عزت واحترام عزیزہے، تم پاکستان میں ایک قابل قدر ادارے کی حیثیت سے اپنی خدمات سرانجام دینا چاہتے ہو تو آپ کواس گندے کیڑے کے پیچھے سے نکلنا ہوگا،ہوسکتا ہے کسی کو مصلحت کی سیاست اور حکومت کی مجبوری کمزور کردے، کسی کو مفادات کمزور کردیں، لیکن ہمیں اقتدار کا کوئی لالچ نہیں ہے۔ہم اللہ کے لیے میدان میں نکلیں ہیں، یہاں تک ناجائز ناپاک حکومت کو سمندر برد کردیں گے۔

یہ بھی بتانا چاہتا ہوں تم نے پارلیمنٹ کو جس طرح اپنا کھلونا بنایا، تم نے حکمرانوں کی صفوں میں بیٹھے ممبران کو دھمکیاں دی ہیں اگر آپ اس اسمبلی کے اجلاس میں نہ گئے اور حکومت کے حق میں ووٹ نہ دیا تو یہ کیس ہوسکتے ہیں، تمہارے مشکوک کردار کو ہم دیکھ رہے ہیں۔پاکستان میں سیاست کرنے کیلئے آزادی حاصل کرنا ہوگی،انہی سے آزادی حاصل کرنا ہے، ہم فوج کوبطور ادارہ احترام دینا چاہتے ہیں ہم کبھی نہیں چاہتے فوج جیسے ادارے کوعام جلسوں میں زیربحث لایا جائے، اس کا دارومدار ہم پر نہیں خود ان کے کردار پر ہوگا، انہوں نے کہا کہ کشمیر کو بیچ دیا اور ڈکار بھی نہیں لیا، کل کشمیر کو بیچا،مودی کی جیت کی دعائیں کرنے والے کشمیر کو بیچ دیا، لیکن آج پاکستان کے دشمن، قاتل کیلئے اسمبلی میں قانون سازی کی جارہی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button

Adblock Detected

We Noticed You are using Ad blocker :( Please Support us By Disabling Ad blocker for this Domain. We don't show any popups or poor Ads.